.

یمن: وزارت دفاع کی عمارت پر کار بم دھماکہ، 25 ہلاک

خود کش بمبار نے بارود بھری گاڑی گیٹ سے ٹکرائِی، درجنوں زخمی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمن کے دارالحکومت میں صنعا میں قائم وزارت دفاع کی بلڈنگ ایک خوفناک بم دھماکے سے لرز اٹھی۔ دھماکے کے بعد موقعے سے زبردست فائرنگ اور ایمبولینسز کی آوازیں آنا شروع ہو گئیں۔

وزارت دفاع کے ذرائع کے مطابق ایک کار سوار خود کش حملہ آور نے وزارت دفاع کے گیٹ سے اپنی بارود بھری گاڑی ٹکرا دی۔ جس سے متعدد ہلاکتیں ہوئی ہیں۔ وزارت دفاع نے ابتدائی طور پر 25 ہلاکتوں کی تصدیق کرتے ہوئے بتایا ہے کہ زخمیوں کی تعداد درجنوں ہے۔

العربیہ کے نمائندے کے مطابق دھماکے کے بعد دہشت گردوں اور سکیورٹی فورسز کے درمیان فائرنگ کا تبادلہ بھی ہوا۔ خدشہ ہے کہ ہلاک ہونے والوں کی تعداد میں اضافہ ہو سکتا ہے جس کی وجہ سے نقصان کا زیادہ اندیشہ ہے۔

ابتدائی اطلاعات کے مطابق مسلح افراد نے وزارت دفاع کے علاوہ ہسپتال اور قریب ہی کھڑی بعض دیگر عمارات کی طرف رش کیا۔

وزارت دفاع پر یہ خود کش حملہ دفتری اوقات شروع ہوتے ہی کیا گیا ہے۔ تاہم ابھی حتمی نقصان کے بارے میں مصدقہ اطلاعات سامنے نہیں آئی ہیں۔ تاہم مبصرین کے مطابق دہشت گردوں کا وزارت دفاع کے گیٹ تک پہنچ جانا غیر معمولی حالات کی نشاندہی کرتا ہے۔

واضح رہے یمن میں امن و امان کی صوارتحا ل مخدوش ہو رہی ہے۔ چند روز قبل صنعا میں روس سے آئے ہوئے فوجی مشیر کو دہشت گردوں نے نشانہ بنایا تھا ، جبکہ اس سے پہلے تیل سے متعلقہ یمنی تنصیبات اور فوجی چوکیوں پر بھی حملے ہوتے رہے ہیں۔