سکول ٹیچر نے شاگرد پر تیزاب پھینک دیا، تحقیقات شروع

حادثہ ہوا ہے، جان بوجھ کر نہیں کیا، استاد کا موقف

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

استاد نے اپنے ہی شاگرد پر مبینہ طور پر تیزاب پھینک کر اس کی گردن اور سینہ جلا دیا ہے۔ یہ واقعہ ام القری ہائی سکول بشا میں پیش آیا ہے۔

استاد نے سکول انتظامیہ کے سامنے موقف اختیار کیا ہے کہ یہ واقعہ کسی ارادی کوشش کے نتیجے میں پیش نہیں آیا ہے بلکہ یہ محض ایک حادثہ ہے۔ لیکن تیزاب سے زخمی ہونے ہونے والے طالبعلم اور اس کے 14 ساتھی طلبہ کا اصرار ہے کہ استاد نے بلاجواز اور جان بوجھ کر ایسا کیا ہے۔

تیزاب سے متاثرہ طالب علم کو ہسپتال داخل کرا دیا گیا ہے۔ ہسپتال کے ذرائع کے مطابق طالبعلم کو ہفتے کے علاج اور چھٹی کی ضرورت ہو گی۔ بشا کے ڈائریکٹر تعلیم سعد السلیم کے مطابق اس واقعے کی تحقیقات کیلیے ایک کمیٹی قائم کر دی گئی ہے، جو فریقین کا موقف سننے کے علاوہ دستیاب شہادتوں کا جائزہ لے گی۔

دریں اثناء واقعے میں مبینہ ملوث استاد کو تفتیش کیلیے بیورو آف انویسٹی گیشن اور پراسیکیوشن کے حوالے کر دیا گیا ہے۔ انہیں تفتیش مکمل ہونے تک ان اداروں کے پاس رہنا ہو گا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں