.

حلب میں اسدی فوج کے بیرل بم حملے، 94 شامی جاں بحق

برطانیہ، شام کے ڈیڑھ سو ٹن کیمیائی ہتھیار تلف کرنے پر آمادہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

شام میں سردی کی شدت کے باوجود سرکاری فوج کی جانب سے شہریوں کے خلاف طاقت کے استعمال کا سلسلہ جاری ہے۔ انسانی حقوق کے کارکنوں کی اطلاعات کے مطابق حلب اور اس کے مضافاتی شہر"عندان" میں بیرل بموں سے کیے گئے حملوں میں کم سے کم 94 افراد ہلاک اور سیکڑوں زخمی ہوئے ہیں۔

ادھر باغیوں نے حلب میں الکندی اسپتال پر قبضے کا دعویٰ کیا ہے۔ یہ اسپتال سرکاری فوج کا اس علاقے میں اہم گڑھ سمجھا جاتا تھا۔
سیرین نیوز نیٹ ورک کے مطابق حلب کی القابون کالونی میں اسدی فوج نے بھاری توپخانے اور جنگی جہازوں سے بھی گولہ باری کی ہے جس کے نتیجے میں درجنوں ہلاک اور زخمی ہوئے ہیں۔

نیوز نیٹ ورک کے مطابق حمص میں سرکاری فوج کی حامی ملیشیا کے حملے میں دار کبیر کے علاقے میں زخمی ہونے والے دو شہری چل بسے ہیں۔ درایں اثناء ایک دوسری پیش رفت میں برطانیہ نے شام کا ڈیڑھ سو ٹن کیمیائی اسلحہ اپنی سمندری حدود میں تلف کرنے کی اجازت دے دی ہے۔

لندن وزارت خارجہ کی جانب سے جاری ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ شام سے کیمیائی ہتھیار بحری جہازوں پر برطانیہ کی ایک بندرگاہ تک لائے جائیں گے جہاں اگلے مرحلے میں انہیں تلف کردیا جائے گا۔