.

"خلیج کی متحدہ سیکیورٹی کمان ایک لاکھ اہلکاروں پر مشمتل ہو گی"

خلیجی ممالک کی وحدت خطے کی حقیقی طاقت ہے: سعودی عرب

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب کے وزیر برائے قومی سلامتی شہزادہ متعب بن عبداللہ بن عبدالعزیز نے انکشاف کیا ہے کہ خلیج تعاون کونسل کی متحدہ فورس کا ابتدائی ڈھانچہ ایک لاکھ سیکیورٹی اہلکاروں پر مشتمل ہوگا۔ ان کا کہنا تھا کہ سعودی عرب کی مسلح افواج متحدہ سیکیورٹی کمان میں اپنی ذمہ داریاں سنھبالنے کو تیار ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق نیشنل سیکیورٹی فورسزکے زیر اہتمام ہونے والی چوتھی "وفاداری" مشقوں کی پاسنگ آؤٹ پریڈ میں شرکت کے بعد تقریب سے خطاب کرتے ہوئے سعودی وزیر نے کہا کہ مشرق وسطیٰ، عالم اسلام اور عرب اقوام کی اصل طاقت ان کے اتحاد میں مضمر ہے۔ متحدہ خلیجی فورس عالم عرب خطے اور عالم اسلام کی نمائندہ طاقت ثابت ہوگی۔ انہوں نے مزید کہا کہ خادم الحرمین الشریفین کی مساعی کا نتیجہ ہے کہ خلیجی ریاستیں اقتصادی تعاون کے میدان سے آگے بڑھ کر دفاعی میدان میں بھی متحد ہو رہی ہیں۔

سعودی وزیر برائے نیشنل سیکیورٹی کا کہنا تھا کہ ان کے ملک کی مسلح افواج خلیج کی مشترکہ فوجی کمان میں شمولیت کے لیے تیارہیں۔ ان کے بہ قول ہماری مسلح افواج نے وزارت دفاع، وزارت داخلہ اور قومی سلامتی کے تمام اداروں سے مل کرسعودی عرب کا دفاع ناقابل تسخیر بنا دیا ہے۔ یہی افوج خطے کی سلامتی اور استحکام میں بھی اہم کردار ادا کریں گی۔

فوجی جوانوں سے خطاب کرتے ہوئے شہزادہ متعب نے بتایا کہ حکومت سنہ 2015ء کے اوائل میں مسلح افواج کو بلیک ہاک اور اپاچی ہیلی کاپٹر فراہم کرے گی۔