.

دبئی پولیس نے 13' میں منشیات اسمگلنگ کی بڑی کوشش ناکام بنائی

تین عرب باشندے گرفتار، کروڑوں درہم مالیت کی منشیات برآمد

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

دبئی پولیس برائے انسداد منشیات نے سال 2013ء کے دوران منشیات اسمگلنگ کی سب سے بڑی کارروائی ناکام بنانے کا دعویٰ کرتے ہوئے کہا ہے کہ پولیس نے عرب باشندوں پر مشتمل ایک پانچ رکنی نیٹ ورک کا سراغ لگانے کے بعد ان میں سے تین کو گرفتارکر لیا ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق دبئی پولیس کا کہنا ہے کہ منشیات کی اسمگلنگ کے دھندے میں ملوث پانچ رکنی نیٹ ورک میں سے تین افراد کو گذشتہ اکتوبر کے اوائل میں حراست میں لیا گیا تھا۔ دیگر اسمگلروں تک پہنچنے کے لیے کارروائی کو صیغہ راز میں رکھا گیا، تاہم پولیس کو امید ہے کہ دوسرے ملزمان بھی جلد گرفتار کر لیے جائیں گے۔

پولیس کا کہنا ہے کہ ملزمان کے قبضے سے "کیپٹاگون" نامی منشیات کی چھ لاکھ گولیاں قبضے میں لی گئی ہیں جن کی مالیت 115 ملین اماراتی درہم بتائی جاتی ہے۔

خلیج تعاون کونسل کے لیے اقوام متحدہ کے علاقائی مندوب برائے انسداد منشیات وجرائم کا کہنا ہے کہ دبئی پولیس کی جانب سے ایک سو پندرہ ملین درہم کی منشیات پکڑنا نہ صرف بڑی کامیابی ہے بلکہ یہ رواں سال کی منشیات کی اسمگلنگ ناکام بنانے کی دنیا کی سب سے بڑی کارروائی ہے۔

دبئی پولیس برائے انسداد منشیات کا کہنا ہے کہ انہیں خفیہ ذرائع سے اطلاعات ملی تھیں کہ عرب ممالک کے باشندوں پر مشتمل ایک نیٹ ورک منشیات کی اسمگلنگ میں ملوث ہے۔ پولیس نے اس گروہ کا سراغ لگانے کی کوششیں شروع کر دیں جو بالآخر کامیاب ہوئیں۔

تین ماہ قبل پولیس نے دبئی میں العویر کے مقام پر چھاپہ مار کر تین افراد کو حراست میں لیا۔ ملزمان میں ایک اماراتی شہری ہے جبکہ دو افراد دوسرے عرب ملکوں سے تعلق رکھتے ہیں۔ انہوں نے اپنے خفیہ ٹھکانے میں بھاری مقدار میں منشیات کا ذخیرہ کر رکھا تھا جسے دوسرے ملکوں تک پہنچانا اور دبئی میں فروخت کرنا تھا۔

پولیس کا کہنا ہے کہ ایک ملزم نے منشیات کے دھندے میں ملوث ہونے کا اعتراف کر لیا ہے تاہم دوسرے دو ملزمان سے تفیتش اور نیٹ ورک میں شامل دو عناصر کی گرفتاری کے لیے کوششیں جاری ہیں۔