سعودی یونورسٹی کا استاد فلم سازی کی تعلم پانے امریکا جائیگا

یوٹیوب نے سعودی عرب میں فلمی کاروبار کی راہ ہموار کر دی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی جامعہ امام محمد ابن سعود نے امریکی فلم سازی سے متعلق تعلیمی سکالرشپ پر پروفیسر کو امریکا بھجوانے کا فیصلہ کیا ہے۔ اس سلسلے میں ابلاغیات کے استاد پروفیسر علی التمیم کو نامزد کیا گیا ہے۔ بیرون ملک سٹڈی پروگرام کے حوالے سے فلم سازی کی تعلیم کے حق میں یہ فقید المثال فیصلہ ہے۔

سعودی عرب جہاں مووی تھیٹرز پر پابندی ہے میں ایک جامعہ کا یہ فیصلہ غیر معمولی اہمیت کا حامل ہے۔ واضح رہے اسی اثناء میں ایک اور سعودی جامعہ شاہ سعود نے اپنے ہاں موجود تھیٹر سے متعلقہ شعبے کو بند کر دیا ہے۔

پروفیسر علی التمیمی نے '' العربیہ '' سے بات کرتے ہوئے کہا کہ اپنے ملک میں میڈیا کی تعلیم پانے کے بعد میں نے اپنی تعلیم کو عمل میں لانے کی کوشش کی اور ایک فلم بنانے کا فیصلہ کیا۔

پروفیسر تمیمی کے مطابق ان کی فلم کی کہانی اس طرح ہے کہ ' سعودی ماحول میں کام کرنے والا ایک ملازم ہے جو امریکا پڑھنے کیلیے جانے والے طلبہ سے رشوت مانگتا ہے اور انہیں بلیک میل کرتا ہے۔''

امریکا میں فلم سازی کے موضوع پر تعلیمی سکالر شپ حاصل کرنے والے استاد کا مزید کہنا ہے کہ '' سعودی معاشرہ اب سینما سے ایک آگاہ معاشرہ ہے اور یو ٹیوب نے فلمی کاروبار کا سعودی عرب میں بھی راستہ کھول دیا ہے۔''

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں