.

حکومت مخالف عراقی رکن پارلیمنٹ رہائی کے بعد گھر پہنچ گئے

گرفتاری کے وقت جھڑُپوں کی ویڈیو 'العربیہ' کو موصول

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

عراق سے 'العربیہ' کے نامہ نگار نے اپنے مراسلے میں بتایا ہے کہ اپوزیشن اتحاد 'العراقیہ لسٹ' سے تعلق رکھنے والے رکن پارلیمان احمد العلوانی رہائی کے بعد گھر واپس پہنچ گئے ہیں۔ احمد العلوانی کو ہفتے کے روز گرفتار کیا گیا تھا جس کے بعد رمادی میں بطور احتجاج شروع ہونے والی جھڑپوں میں ان کے بھائی سمیت چھے افراد ہلاک ہو گئے تھے۔

سنی اکثریتی صوبے الانبار کے قبائل نے العلوانی کی رہائی کے وزیر اعظم نوری المالکی کو دی گئی ڈیڈ لائن مقرر کی تھی وہ اتوار کے روز ختم ہونے کے بعد اہالیاں الرمادی نے بڑی تعداد میں احتجاجی مظاہرے شروع کئے، جس میں العلوانی کی فوری رہائی کا مطالبہ دہرایا جاتا رہا۔

ایک ملتی جلتی پیش رفت میں 'العربیہ' نے گذشتہ روز احمد العلوانی کی گرفتاری کے موقع پر ہونے والی جھڑپوں کی ویڈیو فوٹیج حاصل کی ہے۔ یہ مناظر عراقی فوج کے کیمرہ مین نے فلمبند کئے تھے۔

ادھر 'العربیہ' کے نامہ نگار نے مزید بتایا کہ جنوبی عراق میں فوجی ساز و سامان کی نقل و حرکت دیکھنے میں آئی ہے۔ یہ نقل و حرکت بصرہ، ناصریہ، مثنی اور واسط سے الانبار کی جانب جاتی دیکھی گئی۔

'العربیہ' ذرائع کے مطابق بصرہ کے علاقے سے الانبار کی جانب فوجی ساز و سامان کی نقل و حرکت وزیر اعظم نوری المالکی کے حکم پر کی جا رہی ہے۔