.

عسکریت پسندوں کا گیس پائپ لائن پر حملہ

سینائی میں یہ حملہ صنعتوں کو گیس فراہمی معطل کرنے کیلیے کیا گیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

مسلح بندوق برداروں نے گیس پائپ لائن کو نشانہ بنا کر گیس سپلائی معطل کردی۔ سکیورٹی اداروں اور ماہرین کی طرف سے فوری طور پر موقع پر پہنچ کر گیس پائپ لائن مرمت کرنے کی کوشش ۔

تفصیلات کے مطابق مصر کے تشدد پسندوں کے حملوں کی زد میں رہنے والے جزیرہ نما سینا میں ایک ایسی گیس پائپ لائن کو تخریب کا نشانہ بنایا ہے جو بنیادی طور پر صنعتی اداروں کو گیس فراہمی کا ذریعہ ہے۔ عالمی خبر رساں ادارے ایایف پی نے سرکاری حکام کے حوالے سے بتایا ہے کہ اس کارروائی کے باعث کوئی جانی نقصان نہیں ہوا ہے۔

عسکریت پسندوں کی کوشش رہی ہے کہ گیس پائپ لائن کے ذریعے اسرائیل اور اردن کو گیس کی فراہمی روکی جائے۔ اس وجہ سے سابق مطلق العنان حکمران حسنی مبارک کے اقتدار کے خاتمے کے بعد سینائی میں 2011 سے مسلسل عسکری کارروائِیاں ہو رہی ہیں۔

کچھ عرصہ سے سینائی میں مصری فوج اور پولیس پر حملوں کے واقعات میں بھی اضافہ ہو گیا ہے۔ ان واقعات میں متعدد اہلکار ہلاک اور زخمی ہو چکے ہیں۔ ان کارروائیوں کے حوالے سے نمایاں طور پر سامنے آنے والا نام عسکری گروپ انصار بیت المقدس ہے۔ اس گروپ کا القاعدہ سے تعلق بتایا جاتا ہے۔

عسکریت پسند گروپ انصار بیت المقدس نے مصر کے شہری علاقوں میں ہونے والے حالیہ دھماکوں کی ذمہ داری قبول کی ہے۔ ان دھماکوں میں منصورہ میں وزارت داخلہ کے مرکز پر کار بم دھماکے کے علاوہ وزیر داخلہ محمد ابراہیم کے قافلے کو بم دھماکے سے اڑانے کی کوشش بھی شامل ہے۔