.

القاعدہ کا صوبہ انبار کے شہر رمادی پر کنٹرول

شہر میں مسلح افراد کا گشت، القاعدہ کے ترانے بجاتے رہے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

القاعدہ سے وابستہ جنگجووں نے انبار صوبے کے دارالحکومت رمادی کا کنٹرول دوبار حاصل کر لیا ہے۔ القاعدہ کو یہ کامیابی اس وقت ملی جب عراقی حکومت نے ارکان پارلیمنٹ کے مطالبے کے بعد سکیورٹی فورسز کو علاقے سے واپس بلا لیا تھا۔

عالمی خبر رساں ادارے "اے ایف پی" کے مطابق صحافیوں نے ایسے درجنوں ٹرکوں کو دیکھا ہے جن میں مسلح افراد بھاری اسلحے سے لیس تھے اور گلیوں میں گشت کر رہے تھے۔ یہ مسلح افراد القاعدہ کے روایتی ترانے گا رہے تھے جن میں عراق کو اسلامی ریاست بنانے کے عزم کا اظہار تھا۔

اس سے پہلے عسکریت پسندوں نے شہر کے متعدد تھانوں کی عمارات کو اڑا دیا تھا اور قیدیوں کو رہا کرا لیا تھا۔ اس سلسلے میں صرف فلوجا کے تین تھانے بھی شامل تھے۔ دوسری جانب رامادی، تارمیہ وغیرہ میں سنی شیعہ لڑائی میں شدت آ رہی ہے۔

سنی مسلمانوں میں اس امر پر سخت تشویش پائی جاتی ہے کہ شیعہ مسلک کے لوگوں کی قیادت میں موجود حکومت سنیوں کا استحصال کر رہی ہے، جبکہ سکیورٹی فورسز سنیوں کو بطور خاص باقی ہے۔ چند روز قبل سنیوں کے اکھاڑنے سے یہ ردعمل اور زیادہ شدت پکڑ گیا ہے۔