.

جان کیری کا دورہ: اسرائیل نے 85 سالہ فلسطینی مار ڈالا

2014 میں پہلے فلسطینی کی شہادت مغربی کنارے میں ہوئی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

اسرائیلی سکیورٹی فورسز نے خوفناک آنسو گیس کے ذریعے 85 سالہ بوڑھے فلسطینی کی جان لے لی ہے۔ یہ واقعہ مقبوضہ مغربی کنارے میں پیش آیا ہے جہاں بوڑھا فلسطینی اپنے گھر میں موجود تھا اور اسرائیلی فورسز کے پھینکے ہوئے آنسو گیس کے شیلوں کی بارش گھروں کے اندر تک ہو رہی تھی۔

اسی دوران بوڑھا فلسطینی گھر کے اندر زہریلا دھواں بھر جانے کے باعث دم گھٹ کے جاں بحق ہو گیا۔ سنہ 2014 میں اسرائیلی فورسز کے ہاتھوں شہید ہونے والا یہ پہلا فلسطینی ہے جسے نابلس کے قریب اس کے گھر میں مار دیا گیا ہے۔ مغربی کنارے میں موجود اسرائیلی ترجمان نے اس واقعے کے بارے میں ابھی تک کسی قسم کا تبصرہ یا موقف پیش نہیں کیا ہے البتہ یہ کہا ہے کہ اس واقعے کی تفصیلات جمع کی جا رہی ہیں۔

تفصیلات کے مطابق فلسطینی نوجوان علاقے میں تحریک "فتح" کے قیام کا 49 واں یوم تاسیس منا رہے تھے کہ سکیورٹی فورسز پہنچ گئیں اور تصادم شروع ہوگیا۔ اس پر اسرائیلی فوجیوں نے آنسو گیس کے شیل فائر کیے ۔ جس سے ایک فلسطینی جاں بحق ہوا ہے۔

واضح رہے اس 85 سالہ بوڑھے فلسطینی کی ہلاکت ایک ایسے وقت میں ہوئی ہے جب امریکی وزیر خارجہ جان کیری کی آمد کا چرچا ہے۔ گزشتہ سال 2013 میں انسانی حقوق کی صورتحال کو مانیٹر کرنے والے اداروں نے مغربی کنارے متعدد ہلاکتیں ریکارڈ کی ہیں۔