.

عراق:بغداد اور بعقوبہ میں بم دھماکے،59 افراد ہلاک

القاعدہ کے جنگجووّں نے صوبہ انبار میں اپنی پوزیشن بہتر بنا لی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

عراق کے دارالحکومت بغداد کے مختلف علاقوں اور شمالی شہر بعقوبہ کے نزدیک ایک گاوّں میں پے در پے بم دھماکوں میں انسٹھ افراد ہلاک اور درجنوں زخمی ہو گئے ہیں۔ سرکاری اور سکیورٹی حکام نے ان ہلاکتوں کی تصدیق کر دی ہے۔

بغداد میں نصف درجن دھماکوں شیعہ آبادی والے علاقوں کو نشانہ بنایا گیا ہے جبکہ دو دھماکے ملی جلی آبادیوں میں ہوئے ہیں۔سکیورٹی حکام کے مطابق بدھ کے روز ایک دھماکا بغداد کے شمال میں شعلہ کے علاقے میں اس وقت ہوا جہاں بارود سے بھری گاڑی کو ایک مارکیٹ کے نزدیک اڑا دیا گیا۔

اس دھماکے کے نتیجے میں پانچ افراد ہلاک اور بارہ زخمی ہو گئے۔ ایک اور کار بم دھماکا کرادہ کے مرکزی حصے کے کاروباری علاقے میں ہوا۔ اس دھماکے سے چار عام شہری ہلاک اور 14 زخمی ہو گئے۔

پولیس ذرائع کے مطابق تیسرا دھماکا مشرقی مامل کے علاقے کی مارکیٹ میں ہوا۔ اس دھماکے میں تین افراد ہلاک جبکہ آٹھ زخمی ہو گئے۔یہ بم دھماکے صوبہ الانبار میں عراقی فورسزاور سنی مسلک کے عسکریت پسندوں کے درمیان جھڑپوں کے بعد ہوئے ہیں۔القاعدہ نے صوبہ انبار کے دو اہم شہروں میں اپنا کنٹرول مزید مضبوط بنا لیا ہے۔

عراق کے دیگر علاقوں سے بھی بم دھماکوں کی اطلاعات ملی ہیں۔ ان تمام بم دھماکوں اور پر تشدد کارروائِیوں کے دوران مجموعی طور پر انسٹھ افراد ہلاک ہو گئے ہیں۔