.

ایران جنیوا ٹو میں شرکت کا حق نہیں رکھتا: سعودی عرب

شامی اپوزیشن، اور امریکا بھی ایران کی شرکت کیخلاف ہے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

اقوام متحدہ کی طرف سے ایران کو جنیواٹو میں شرکت کی دعوت ملنے پر سعودی عرب نے اپنے ردعمل میں کہا ہے کہ'' ایران اس امن کانفرنس میں شرکت کا حق نہیں رکھتا ہے۔ صرف اسی ملک کو شرکت کی دعوت دی جا سکتی ہے جو عبوری حکومت کی حامی ہو۔''

سعودی عرب کا یہ موقف '' العربیہ '' کے ذریعے سامنے آیا ہے۔ سعودی بیان میں کہا گیا ہے کہ'' ایران نے شام میں عبوری حکومت کیلیے کبھی آواز بلند نہیں کی ہے جبکہ اس کے فوجی بشارالاسد کی طرف سے لڑ رہے ہیں۔''

واضح رہے اس سے پہلے شامی اپوزیشن بھی ایران کی جنیواٹو میں امکانی شرکت کے خلاف سخت موقف سامنے لا چکی ہے۔ ایران کو دعوت اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل بان کی مون نے ایرانی وزیر خارجہ جواد ظریف کے ہمراہ ایک نیوز کانفرنس کے دوران دی ہے۔

تاہم اس دعوت پر شامی اپوزیشن اور عرب دنیا میں سخت ردعمل ہے۔ امریکا نے بھی مطالبہ کیا ہے کہ بان کی مون کو ایران کو دی گئی دعوت واپس لے لینی چاہیے۔ پیر کے روز سعودی عرب کی طرف سے باضاطہ بیان جاری کر کے ایران کی جنیوا ٹو میں امکانی شرکت کی مذمت کی گئی ہے۔