.

تیونس: عبوری وزیر اعظم کو اوباما کا فون، دورے کی دعوت

مہدی جمعہ کو آئین کی منظوری اور کابینہ کی تشکیل پر مبارکباد

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکی صدر راک اوباما نے تیونس کے عبوری وزیر اعظم مہدی جمعہ کو دورہ امریکا کی دعوت دی ہے۔ اس سے پہلے اوباما نے عبوری وزیر اعظم کو آئِین کی منظوری اور نئی کابینہ کی تشکیل پر مبارک باد دی۔

صدر اوباما نے مہدی جمعہ کو فون پر ان تمام تیونسی سیاسی جماعتوں کو جمہوری حوالے سے 2011 سے حاصل ہونے والی کامیابیوں میں شریک کرنے کیلیے کہا تاکہ ملک جمہوریت کے راستے پر آگے بڑھ سکے۔

اس فون کال کے بعد جاری کیے گئے بیان میں کہا گیا ہے کہ عبوری وزیر اعظم کو رواں سال کے آخر میں امریکی دورے پر آنے کی دعوت دی گئی ہے۔

واضح رہے طویل عرصہ تک تیونس کے حکمران رہنے والے زین العابدین بن علی کی عوامی انقلاب کے ذریعے 2011 میں رخصتی کے بعد اسلام پسند جماعت النہضہ کی منتخب حکومت قائم ہوئی لیکن اپوزیشن نے اسے تقریبا دو ماہ قبل ایک معاہدے کے تحت مستعفی ہونے پر آمادہ کر لیا۔

اب عبوری حکومت نئے انتخابات کرانے کی ذمہ دار ہے اور اس مقصد کیلیے حکمران جماعت النہضہ اور اپوزیشن نے ٹیکنو کریٹس کے حکومت پر اتفاق کیا تھا، مہدی جمعہ اس حکومت کے سربراہ ہیں۔