یمن فوجی بس میں دھماکہ، 13 اہلکار زخمی چار کی حالت نازک

ابھی کسی گروپ نے ذمہ داری قبول نہیں کی، بس میں افسر بھی سوار تھے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

یمن میں فوجی بس میں دھماکے سے کم از کم 13 اہلکار زخمی ہو گئے ہیں۔ یہ واقعہ یمنی دارالحکومت صنعا میں پیش آیا ہے۔

ایک روز پہلے پیر کے روز بھی صنعا میں مختلف جگہوں پر دھماکے ہو ئے تھے۔ ان میں سے ایک واقعہ فرانس کے سفارت خانے کے قریب بھی ہواتھا۔ جس میں مارٹر گولہ فائر کیا گیا تھا۔

منگل کی صبح فوجی بس کو ٹارگیٹ کرنے کا یہ واقعہ اس وقت پیش آیا جب فوجی افسروں اور اہلکاروں کو لے کر یہ بس دارالسلام کے پاس سے گذر رہی تھی۔ سکیورٹی حکام کے مطابق بس دھماکے میں زخمی ہونے والوں میں سے چار کی حالت نازک ہے۔

اس نوعیت کے دھماکوں اور واقعات کو عام طور پر القاعدہ سے منسوب کیا جاتا ہے جس کی مقامی شاخ انتہائی سرگرم سمجھی جاتی ہے۔ تاہم فوری طور پر کسی گروپ نے اس دھماکے کی ذمہ داری قبول نہیں کی ہے۔

سعودی عرب سے سرحدی اعتبار سے جڑی یمنی ریاست 2011 کے بعد سے مسلسل دہشت گردی اور بدامنی کی زد میں ہے ۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں