.

جنیوا ٹو، دس دن بعد آج سے پھر شروع ہو گی

شامی اپوزیشن کی ترجیح بشار الاسد کی حکومت سے علیحدگی ہو گی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

جنیوا ٹو میں شامی حکومت اور اپوزیشن کے درمیان شروع ہونے مذاکرات کا دوسرا دور دس روز کے وقفے کے بعد آج پیر سے دوبارہ شروع ہورہے ہیں۔

اس سے پہلے جنیواٹو کا تقریبا ایک ہفتے پر پھیلا دور عملا ناکام رہا تھا تاہم شامی حکومت نے پہلی مرتبہ شام کے معاملات میں اپوزیشن کی اہمیت کو اصولی طور تسلیم کر لیا جسے متحدہ اپوزیشن کے سربراہ نے اپنی کامیابی سے تعبیر کیا تھا۔

اگرچہ جنیوا ٹو کا پہلا سات روزہ دور کسی سمجھوتے پر مکمل نہیں ہوا تھا لین اس کے باوجود اقوام متحدہ کے نمائندے الاخضر براہیمی نے ان مذاکرات کو برف پگھلنے کے مصداق قرار دیا۔ براہیمی نے فریقین کے درمیان موجود وسیع خلیج کو پانٹنے کیلیے ایک اہم پیش رفت بھی کہا۔

پہلے دور کے دوران شام کے متحارب فریقین ایک دوسرے کی تنقیص کرنے اور باہم الزامات لگاتے رہے۔ تاہم مذاکرات کے اختتام پر اگلے روز جنگ اورمحاصرے زدہ حمص شہر سے سہ روزہ جنگ بندی کے دوران سینکڑوں شہریوں کا انخلاء ممکن ہوا۔

پیر کے روز نئے سرے سے امکان ہے کہ فریقین ایک دوسرے کے ساتھ معاملات کی بہتری کیلیے بات چیت کا آگے بڑھاننے پر متفق ہو جائیں گے۔ اپوزیشن اتحاد کی ترجیح بشارالاسد کی صدارت سے علیحدگی ہو گی ۔