.

لبنان: القاعدہ سے منسلک گروپ کا کمانڈر نجم عباس گرفتار

نجم عباس کو عبداللہ عزام بریگیڈ کا ذمہ دار بتایا گیا ہے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

القاعدہ سے وفاداری رکھنے والے گروپ کے کمانڈر کو لبنانی سکیورٹی فورسز نے بدھ کے روز حراست میں لے لیا ہے۔ کمانڈر کا نام نجم عباس بتایا گیا ہے جس کا تعلق عبداللہ عزام بریگیڈ سے تھا۔

اسی گروپ نے بیروت میں پچھلے سال نومبر میں ایرانی سفارت خانے پر دوہرا بم دھماکہ کرنے کی ذمہ داری قبول کی تھی۔ واضح رہے اس دوہرے بم دھماکے میں ایران کا ثقافتی اتاشی سمیت 25 افراد ہلاک ہو گئے تھے۔

لبنانی فوج کے انٹیلی جنس ڈائریکٹوریٹ نے نجم عباس کی مسلسل نگرانی کے بعد اسے حراست میں لیا ہے۔ یہ بات فوج کی طرف سے جاری کیے گئے ایک بیان میں کہی گئی ہے۔ فوج نے یہ بیان عبداللہ عزام بریگیڈ کے کمانڈر کی بدھ کے روز گرفتاری کے فوری بعد جاری کیے گئے بیان میں بتائی ہے۔

عبداللہ عزام بریگیڈ جو اپنے آپ کو القاعدہ سے منسلک بتاتا ہے کو امریکا نے جنوری 2009 میں دہشت گرد گروپ قرار دیا تھا۔ اس سے پہلے لبنانی سکیورٹی فورسز نے ایک اور القاعدہ کمانڈر ماجد الماجد کو بھی گرفتار کر لیا تھا جس کی ہلاکت حراست کے دوران ہی ہو گئی تھی۔

لبنانی سکیورٹی فورسز نے کمانڈر نجم عباس کے بارے میں مزید کوئی تفصیل جاری نہیں کی ہے کہ یہ گرفتاری کس جگہ سے اور کس طرح ممکن ہوئی ہے۔