.

لبنان: بالآخر وزیرداخلہ کے نام پر بھی اتفاق ہو گیا

نئی کابینہ دس ماہ بعد تشکیل پا سکی، کابینہ سے امیدیں بڑھ گئیں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

لبنان میں دس ماہ پر پھیلے سیاسی بحران کے بعد نئی حکومت کی تشکیل سے نئی امیدوں نے جنم لیا ہے۔ اس سلسلے میں لبنانی حکام کے درمیان باضابطہ بات چیت بھی شروع ہو گئی ہے۔

اس وقت تمام فریق نئے نامزد وزیر اعظم کی نئی کابینہ کیلیے آمادہ اور متفق ہیں۔ واضح رہے پچھلے سال ماہ اپریل سے لبنان میں کابینہ موجود نہ تھی۔ کابینہ کی عدم موجودگی نے حزب اللہ اور سابق وزیر اعظم سعد الحریری کے درمیان تقسیم کو مزید گہرا کیے رکھا ہے۔

عالمی خبر رساں ادارے اے ایف پی کے مطابق جب اخبار نویسوں کو نیوز کانفرنس میں بلالیا گیا کہ نئی کابینہ کا اعلان کیا جائے گا تو ایک نئی پیچیدگی سامنے آ گئی۔ یہ تنازعہ وزارت داخلہ کے قلم دان کے حوالے سے سامنے آیا ۔

اس مسئلے کے حل کیلیے تمم سلام کو ایوان صدر مشورے اور مدد کیلیے جانے کا سوچنا پڑا۔ کیونکہ وزارت داخلہ کے قلمدان کا تنازعہ حزب اللہ اور آٹھ مارچ کو وجود میں آنے والے اتحاد کے بعد ابھرا۔ البتہ بعد ازاں فریقین نے زیادہ اعتدال پسند وزیر داخلہ پر بھی اتفاق کر لیا۔

واضح رہے سعد الحریری نے 21 جنوری کو ہی اعلان کر دیا تھا کہ ان کا گروپ قومی اتحاد کی خاطر حزب اللہ کے ساتھ کابینہ میں شامل ہونے کو تیار ہے۔