.

لبنان : سنی عالم سمیت 52 کیلیے سزائے موت کی سفارش

ملزمان پر لبنانی فوجی افسروں اور سویلینز کو قتل کرنے کا الزام ہے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

لبنانی فوجی عدالت کے جج نے سنی عالم دین احمد العسیر اور سابق پاپ گلوکار فادی شاکر کو 52 دیگر مشتبہ افراد کے ساتھ سزائے موت دلوانے کیلیے مقدمہ فوج ٹریبیونل کو بھجوادیا ہے۔ یہ بات عدالتی ذرائع سے جمعہ کے روز معلوم ہوئی ہے۔

جج ریاض ابو غیاث نے ان کے خلاف فوجیوں اور عام شہریوں کے قتل اور اقدام قتل کے الزام کے تحت مقدمہ چلایا۔ قتل کے یہ واقعاات پچھلے سال جولائی میں ہونے والے فسادات کے دوران پیش آئے تھے۔ ان فسادات میں 18 فوجی اور 11 بندوق بردار ہلاک ہوئے تھے۔

عالم دین احمد العسیر اور سابق پاپ سنگر شاکر اپنے دوسرے حامیوں کے ساتھ موقع سے فرار ہو گئے تھے۔ ملزمان پر مسلح گروپ بنانے کا الزام ہے ۔ اس گروپ نے مبینہ طور پر ایک ریاستی ادارے سمیت، فوج پر حملہ کیا ۔ جس کے نتیجے میں فوجی افسران اور اہلکار ہلاک ہو گئے۔

ان واقعات میں بھاری بارود، اور اسلحہ استعمال کیا گیا تھا۔ واضح رہے احمد العسیری شیعہ ملیشیا حزب اللہ کے سخت مخالفین میں شمار ہوتے ہیں۔ جج نے مقدمہ فوجی ٹریبیونل کے سپرد کر دیا ہے۔