مرسی کے صاحبزادے کو مصری پراسیکوٹرز نے رہا کر دیا

دو سگریٹوں، خون اور یورین کا ڈرگ ٹیسٹ ہوگا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

مصری پراسیکیوٹرز نے معزول صدر محمد مرسی کے صاحبزادے کو مبینہ طور پر منشیات بھرے دو سگریٹ رکھنے کے مقدمے میں رہائی کا حکم دے دیا ہے۔ تاہم عبداللہ مرسی کے خلاف تحقیقات جاری رہیں گی۔

رہائی کا حکم اس شرط پر کیا گیا ہے کہ جیب سے ملنے والے سگریٹوں کا ڈرگ ٹیسٹ کرایا جائےگا۔ ریاستی خبر رساں ادارے مینا کے مطابق کے 20 سالہ عبداللہ کے خون اور یورن کے ٹیسٹ بھی لیے گئے۔ رہائی تقریبا 24 گھنٹے کی راست کے بعد عمل میں آئی ہے۔

عبداللہ مرسی اپنے ایک دوست کے ساتھ ایک پارک کی گئی گاڑی میں بیٹھا تھا جب گشتی پولیس نے تلاشی کے بعد گرفتار کر لیا تھا۔ اس موقع پر پولیس نے عبداللہ کی جیب سے دو مبینہ طور پر دو حشیش بھرے سگریٹ پکڑے تھے۔ مرسی خاندان نے اس الزام کو بے بنیاد قرار دیا تھا۔

واضح رہے عبداللہ مرسی معزول صدر محمد مرسی کا سب سے چھوٹا بیٹا ہے۔ اس کے بڑے بھائی اسامہ نے اس گرفتاری کو بد نیتی پر مبنی قرار دے کر اس کی مذمت کی ہے.

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں