.

ابوظہبی: گھریلو ملازمہ کے قتل میں ملوث میاں بیوی گرفتار

قتل کے بعد ایتھوپئن خادمہ کی نعش ویرانےمیں پھینک دی گئی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

متحدہ عرب امارات کے صدر مقام ابوظہبی میں پولیس نے عرب میاں بیوی کو اپنی گھریلو ملازمہ کے قتل کے الزام میں حراست میں لیا ہے۔ دوران تفتیش دونوں نے اعتراف جرم کر لیا ہے۔

اماراتی اخبار "البیان" کی رپورٹ کے مطابق پولیس کوالعجبان کے علاقے سے ایک خاتون کی ناقابل شناخت لاش ملی تھی، جس کی مزید چھان بین کے بعد قریب ہی موجود ایک میاں بیوی پرشبہ ہوا جس کے6 بعد دونوں کو حراست میں لیا گیا تو انہوں نے گھریلو ملازمہ کو قتل کرکے اسے کیمیکل کے ذریعے جلانے کی کوشش کی تھی تاکہ اس کی شناخت ممکن نہ ہو سکے۔

ابوظہبی میں انویسٹی گیشن پولیس کے ڈائریکٹر کرنل ڈاکٹرراشد ابو رشید نے بتایا کہ پولیس کی ایک گشتی پارٹی کو العجبان کے مقام سے ایک غیر آباد مکان سے نیم عریاں اور تشدد زدہ خاتون کی لاش ملی تھی، جس کی شناخت نہیں ہو سکی۔ پولیس نے مزید تفتیش کی تو معلوم ہواکہ خاتون کو تشدد کرکے قتل کیا گیا ہے۔ پولیس نے مقتولہ کے ڈی این اے ٹیسٹ لینے اور دیگرلوازمات مکمل کرنے کے بعد قریب ہی ایک گھر پر چھاپہ مار کر عرب میاں بیوی کو حراست میں لیا۔

مقتولہ کی شناخت کے بعد معلوم ہوا کہ اس کا تعلق ایتھوپیا سے تھا جو غیر قانونی طور پر ابوظہبی میں مقیم تھی اور لوگوں کے گھروں میں کام کاج کرتی تھی۔ پولیس نے ایک غیر ملکی عرب شہری کو شبے میں پکڑا جس کے بعد اس کی اہلیہ کو بھی حراست میں لے کرتفتیش کی گئی۔ دونوں نے اعتراف جرم کرلیا۔

کرنل ابو رشید نے بتایا کہ آغاز میں ملزم جرم سے انکاری تھا۔ دونوں میاں بیوی کے بیانات میں بھی تضاد پایا گیا جس پر پولیس کو مزید شبہ ہوا اور تحقیقات کا دائرہ بڑھا دیا گیا۔ بعد ازاں ملزمان نے خاتون ملازمہ کو قتل کرنے کا اعتراف کرلیا۔

پولیس کو بیان دیتے ہوئے ملزمہ نے بتایا کہ اس نے گھریلو ملازمہ کو کوڑے سے بری طرح پیٹا جس کے نتیجے میں اس کی جان نکل گئی۔ بعد میں ثبوت مٹانے کے لیے اس پر کیمیکل مواد پھینکا تاکہ میت جل جائے اور اس کا کوئی ثبوت باقی نہ رہے۔ میت کو ایک سفری بیگ میں ڈالا اور العجبان میں ایک ویران مکان میں پھینک آئے تھے۔

پولیس کا کہنا ہے کہ مشتبہ قاتل جوڑے کا ایک بچہ ابوظہبی فیملی پروٹیکشن ڈیپارٹمنٹ میں رکھا گیا ہے جبکہ ایک آٹھ ماہ کے شیرخوار کو ماں کے ساتھ حراستی مرکز میں چھوڑا گیا ہے۔ ملزمان کے خلاف فرد جرم تیار کی جا رہی ہے۔