.

شام میں ہلاک حزب اللہ کے 56 جنگجوؤں کی لبنان میں تدفین

یبرود میں سرکاری فوج اور باغیوں کے درمیان گھمسان کی جنگ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

شام میں صدر بشار الاسد کی حمایت میں جنگ لڑتے ہوئے لبنانی شیعہ ملیشیا حزب اللہ کے 56 جنگجو مارے گئے ہیں، جنہیں لبنان میں مختلف مقامات پر سپرد خاک کیا گیا ہے۔

"الحدث" ٹیلی ویژن کی رپورٹ کے مطابق حزب اللہ کے چھپن جنگجووں کو حال ہی میں شام کے شہر یبرود میں باغیوں نے قتل کیا تھا۔ ان کی میتیں مختلف گروپوں کی شکل میں لبنان لائی گئیں جنہیں وہاں پر سپرد خاک کر دیا گیا ہے۔

درایں انسانی حقوق کے لیے سرگرم شام آبزرویٹری برائے انسانی حقوق کی جانب سے جاری ایک بیان میں بتایا گیا ہے کہ لبنان اور شام کی سرحد کے قریب واقع یبرود شہر میں سرکاری فوج اور جیش الحر کے علاوہ لبنانی حزب اللہ، القاعدہ کی ذیلی تنظیموں النصرہ محاذ اور دولت اسلامیہ عراق و شام "داعش" سمیت کئی دوسرے جنگجوؤں کے درمیان بھی گھمسان کی جنگ جاری ہے۔ انسانی حقوق کے گروپ کے مطابق سرحدی علاقے القلمون میں یبرود باغیوں کا آخری اہم ترین دفاعی مرکز ہے۔ سرکاری فوج اپنے حامی گروپوں کی مدد سے اسے باغیوں سے چھیننے کے لیے ایڑی چوٹی کا زور لگا رہی ہے۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق یبرود میں سرکاری فوج نے کچھ پیش قدمی بھی کی ہے اور شہر کے مضافات میں باغیوں نے بعض اہم پوسٹیں خالی کر دی ہیں۔