.

لیبیا : معزول وزیر اعظم کے بیرون ملک جانے پر پابندی عاید

علی زیدان پر کرپشن اور قواعد کی خلاف ورزیوں کے الزامات

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

لیبیا کے معزول ہونے والے وزیر اعظم علی زیدان کے بیرون ملک جانے پر پابندی عاید کر دی گئی ہے۔ پابندی کی وجہ سابق وزیر اعظم کیخلاف جاری تحقیقات بتائی جارہی ہیں۔ جن کا انہیں کرپشن الزامات کی وجہ سے سامنا ہے۔

علی زیدان کے خلاف ایک روز قبل عدم اعتماد کی تحریک کامیاب ہوئی تھی۔ جس کی وجہ ان کی حکومت کا خاتمہ ہو گیا، سابق وزیر اعظم پر الزام ہے کہ انہوں نے مالی کرپشن اور قواعد کی خلاف ورزیاں کی ہیں۔ حکومت سے علیحدگی کے بعد انکی کابینہ میں بطور وزیر دفاع شامل رہنے والے عبداللہ التہینی کو وزارت عظمی پر فائز کیا گیا ہے۔

لیبیا کی قومی اسمبلی کے سربراہ نے نئے وزیر اعظم کے ساتھ مکمل تعاون کرنے کا اعلان کیا ہے۔ وزیر اعظم کے خلاف عدم اعتماد کی تحریک کی منظوری کی فوری وجہ تیل بردار کورین جہاز کا حکومتی کوششوں کے باوجود بحفاظت کھلے پانیوں میں پہنچ جانا بنایا ہے۔

واضح رہے علی زیدان کے خلاف بعض الزامات کی بازگشت اس وقت بھی سامنے آئی تھی جب انہیں چند ماہ قبل مسلح افراد نے ایک ہوٹل سے اغوا کر لیا تھا ۔ بعد ازاں وزارت داخلہ کے ذرائع نے دعوی کیا تھا کہ وزیر اعظم کو مقدمات کی تفتیش کیلیے حراست میں لیا گیا تھا۔

زیدان حکومت پر مسلسل الزام لگتا رہا ہے کہ وہ مسلح باغیوں کو کنٹرول کرنے میں ناکام ہے۔ علی زیدان نے اپنی برطرفی کی ذمہ داری اسلام پسند جماعتوں پر عاید کی ہے۔