.

مصری آرمی چیف فیلڈ مارشل السیسی کی یو اے ای آمد

امارات کی جانب سے اخوان کو دہشت گرد قرار دیے جانے کے بعد دورہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

مصر کے آرمی چیف اور متوقع صدارتی امیدوار فیلڈ مارشل عبدالفتاح السیسی متحدہ عرب امارات کے دورے پر منگل کو ابوظہبی پہنچے ہیں اور توقع ہے کہ وہ یو اے ای کی قیادت سے دوطرفہ تعلقات اور اپنے ملک کو درپیش معاشی مسائل کے حوالے سے تبادلہ خیال کریں گے۔

فیلڈ مارشل السیسی یو اے ای کی جانب سے اخوان المسلمون کو دہشت گرد قراردیے جانے کے صرف دو روز بعد یہ دورہ کررہے ہیں۔یواے ای نے اتوار کو اور اس سے دوروز پہلے جمعہ کو سعودی عرب نے اخوان المسلمون کو دہشت گرد تنظیم قراردے دیا تھا۔

خود مصر پہلا عرب ملک تھا جس نے سب سے پہلے دسمبر 2013ء میں اخوان المسلمون کو دہشت گرد تنظیم قراردے دیا تھا اور اس پر قاہرہ اور اس کے نواحی علاقوں میں بم دھماکے کرانے کا الزام عاید کیا تھا۔

عبدالفتاح السیسی نے گذشتہ ہفتے ایک تقریر میں آیندہ صدارتی انتخابات میں امیدوار ہونے کا عندیہ دیا تھا لیکن وہ اپنی امیدواری کا باضابطہ اعلان صدارتی انتخابات کا حتمی شیڈول جاری ہونے کے بعد کریں گے۔ان کے اس اعلان کے بعد مصر کی اسٹاک مارکیٹ میں بہتری آئی ہے۔

انھوں نے ایک فوجی اجتماع میں تقریر کرتے ہوئے کہا تھا کہ ''اس وقت ملک کی معاشی صورت حال بہت ہی سنگین ہے۔میں مصر کو درپیش مسائل کو اپنی آنکھوں کے سامنے بالکل اسی طرح دیکھ سکتا ہوں،جس طرح میں آپ سب کو دیکھ رہا ہوں۔باتوں سے ملک کی تعمیر نہیں ہوگی بلکہ اس کے لیے سخت محنت اور جدوجہد درکار ہے''۔

مصری آرمی چیف نے اس تقریر میں واضح لفظوں میں اس بات کا اشارہ دیا تھا کہ وہ ملک کو درپیش معاشی مسائل کو حل کرنے کا عزم رکھتے ہیں مگر وہ یہ کام صدر کے منصب پر فائز ہونے کے بعد ہی کرسکتے ہیں۔