شامی سرحد کے نزدیک بم دھماکا، تین اسرائیلی فوجی زخمی

سرحدی علاقے میں گشت پر مامور اسرائیلی فوج کی گاڑی دھماکے میں تباہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

شام کے اسرائیل کے زیر قبضہ علاقے گولان کی پہاڑیوں پر بم کے دھماکے میں تین صہیونی فوجی زخمی ہوگئے ہیں۔

اسرائیلی فوج نے منگل کو ایک بیان میں کہا ہے کہ حملے کا نشانہ بننے والے فوجی شام کے ساتھ واقع سرحدی علاقے میں گشت پر مامور تھے۔اس دوران ان پر دھماکا خیز مواد سے حملہ کیا گیا ہے جس کے نتیجے میں متعدد فوجی زخمی ہوگئے ہیں۔

سکیورٹی ذرائع کا کہنا ہے کہ اسرائیلی فوج کی ایک جیپ پر شام کے ساتھ حدمتارکہ جنگ کے نزدیک حملہ کیا گیا ہے۔انتہا پسند صہیونی وزیراعظم بنجمن نیتن یاہو نے اس بم دھماکے کے بعد کہا ہے کہ اسرائیل اپنے تحفظ کے لیے طاقت سے جواب دے گا۔

اسرائیل اور لبنان وشام کے درمیان سرحدی علاقے میں اس ماہ کے دوران اس طرح کے پہلے بھی چھوٹَے بڑے دھماکے ہوچکے ہیں۔اسرائیلی فوج نے گذشتہ جمعہ کو لبنان کے علاقے میں گولہ باری کی تھی اور مبینہ طور شیعہ ملیشیا حزب اللہ کے ٹھکانوں کو نشانہ بنایا تھا۔

پانچ مارچ کو اسرائیلی فوجیوں نے شام کے ساتھ واقع حد متارکہ جنگ کے نزدیک بم نصب کرنے والے حزب اللہ کے دو مبینہ ارکان پر فائرنگ کردی تھی۔ فروری میں صہیونی فوج نے لبنان کے اندر حزب اللہ کے ایک ٹھکانے پر فضائی حملہ کیا تھا جس کے ردعمل میں حزب اللہ نے جوابی کارروائی کی دھمکی دی تھی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں