شام: خلائی ریسرچ کے منصوبے کی منظوری

شامی سرزمین اور پانیوں کی نگرانی موئثر کی جائے گی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

شام کی حکومت نے خلائی ریسرچ کا ادارہ قائم کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ سرکاری خبر رساں ادارے کے مطابق شامی کابینہ نے'' شامی سپیس ایجنسی '' کے نام سے منصوبے کی منظوری دی ہے تاکہ خلائی ٹیکنالوجی کی مدد سے اپنے پانیوں اور زمین کی نگرانی موئثر بنا سکے۔

حکومت توقع رکھتی ہے کہ یہ ٹیکنالوجی ملکی ترقی میں بروئے کار لائی جا سکے گی۔ تاہم تین برسوں پر محیط خانہ جنگی سے ملکی معیشت کے تباہ ہو جانے اور مغربی ممالک کی طرف سے عاید کردہ پابندیوں سے اقتصادی حالات کی مزید ہونے والی خرابی میں یہ سوال اپنی جگہ اہم ہے کہ کہ شامی حکومت کا خلائی تحقیقات سے متعلق یہ منصوبہ آگے بڑھ سکے گا۔

واضح رہے اس سے پہلے وزیر اعظم وائل الحلقی کے پیش کیے گئے ایک تخمینے کے مطابق تین سالہ خانہ جنگی نے اکتیس ارب ڈالر کا نقصان کیا ہے۔ اس نقصان کو شامی پاونڈز کے حوالے سے دیکھا جائے تو یہ چار ٹریلین پاونڈ کے برابر ہے۔ البتہ وزیر اعظم نے یہ واضح نہیں کیا ہے کہ انہوں نے صرف املاک کو پہنچنے والا نقصان بتایا ہے یا اس سے وسیع پیمانے پر تخمینہ لگایا گیا ہے۔

شام میں 2011 کے دوران شروع ہونے والی مزاحمتی تحریک سے اب تک ایک لاکھ 46 ہزاری شہر لقمہ اجل بن چکے ہیں۔ جبکہ لاکھوں شہری دوسرے ملکوں میں پناہ گزین ہونے پر مجبور ہو چکے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں