.

عراق پر امریکی چڑھائی کی سالگرہ پر حملے، 8 افراد ہلاک

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

عراق کے مختلف علاقوں میں امریکی فوج کی گیارہ سال قبل چڑھائی کی سالگرہ کے موقع پر مختلف حملوں میں آٹھ افراد ہلاک ہوگئے ہیں۔

عراقی حکام کے مطابق جمعرات کو دارالحکومت بغداد سے شمال میں واقع صوبوں صلاح الدین ،کرکوک اور مغربی شہر رمادی میں تشدد کےواقعات رونما ہوئے ہیں جن میں آٹھ افراد مارے گئے ہیں اور سکیورٹی فورسز کو ایک پولیس افسر کی لاش ملی ہے۔

رمادی میں سڑک کے کنارے نصب بم کے دھماکے میں چار افراد ہلاک ہوئے ہیں۔پولیس اہلکار گشت پر تھے۔اس دوران ان کی گاڑی سڑک کنارے نصب بم کی زد میں آ گئی اور دھماکے میں تباہ ہو گئِی ہے۔

شمالی قصبوں حوائجہ ،شرکت ،مدائن اور ابو غریب میں حملوں میں چار افراد مارے گئے ہیں۔ بدھ کو عراق کے مختلف علاقوں میں بم حملوں میں چھیالیس افراد ہلاک ہو گئے تھے۔ واضح رہے کہ عراق میں نئے سال کے آغاز کے بعد سے مزاحمت کاروں کے حملوں میں شدت آئی ہے اور اس ماہ کے دوران اب تک تین سو سے زیادہ افراد مارے جاچکے ہِیں۔جنوری سے اب تک دوہزار سے زیادہ افراد مارے جاچکے ہیں۔

مغربی صوبہ الانبار میں عراقی سکیورٹی فورسز اور القاعدہ سے وابستہ جنگجوؤں کے درمیان جنوری کے آغاز سے لڑائی جاری ہے۔دولت اسلامی عراق وشام (داعش) سے وابستہ جنگجوؤں نے اس صوبے کے دوبڑے شہروں رمادی اور سامراء میں اہم سرکاری عمارتوں پر قبضہ کررکھا ہے اور عراقی فورسز ان دونوں شہروں کا کنٹرول واپس لینے کے ان سے جنگ لڑرہی ہیں۔عراقی فوج نے رمادی پر کنٹرول کا دعویٰ کیا ہے تاہم اس شہر پر حکومت کی مکمل عمل داری قائم نہیں ہوسکی ہے۔