.

لبنان کے شہر طرابلس میں فوج تعینات، فضائی نگرانی شروع

ایک ہفتے کے دوران 30 شہری فرقہ وارانہ کشدگی کی نذر

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

لبنان کے شہر طرابلس میں حالیہ دنوں شدت پکڑنے والی تشدد کی لہر کے بعد فوج تعینات کر دی گئی ہے۔ لبنانی حکومت نے طرابلس شہر میں فوج تعینات کرنے کی منظوری پچھلے ہفتے دی تھی تاکہ صورت حال کو مزید بگاڑ سے بچایا جا سکے۔

واضح رہے پچھلے ایک ہفتے کے دوران اس شہر میں 30 شہری مارے جا چکے ہیں۔ جبال محسن کے اس پڑوسی شہر میں پچھلی کئی دہائیوں سے فرقہ وارانہ فسادات اور خونریزی کے اثرات ہیں۔ اب شام کی کشیدگی نے ایک مرتبہ پھر اس کشیدگی میں گرمی پیدا کر دی ہے۔

سکیورٹی حکام کا کہنا ہے کہ تعینات کی گئی افواج کو ہیلی کاپٹر بھی فراہم کیے گئے ہیں تاکہ علاقے کی فضائی نگرانی کے ساتھ ساتھ سرعت سے شر پسندوں کے ٹھکانے ختم کیے جا سکیں۔ سکیورٹی دورسز نے اسلحہ کی تلاش کیلیے شہر میں جگہ جگہ چیک پوائنٹس قائم کر دی ہیں۔

ان ذرائع کے مطابق پڑوسی شہروں میں بھی ایک دو دنوں میں سکیورٹی فورسز کی تعیناتی کا امکان ہے۔ سکیورٹی فورسز کو مطلوب عناصر کی گرفتاریوں کے خصوصی ہدف کے ساتھ تعینات کیا گیا ہے۔ ان شہروں میں علوی گیارہ فیصد جبکہ سنی 80 فیصد کی تعداد میں ہیں۔