جیش الحر کا شامی فوج کا بمبار طیارہ مار گرانے کا دعویٰ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

شامی صدر بشار الاسد کے خلاف بر سر جنگ باغیوں کی نمائندہ فوج جیش الحر نے حماہ کے مشرقی علاقے معر شحور کے مقام پر سرکاری فوج کا ایک بمبار طیارہ مار گرانے کا دعویٰ کیا ہے۔

جیش الحُر کے مختصر بیان میں کہا گیا ہے کہ شامی فوج کا ایک جنگی جہاز حماہ کے قریب بمباری کے لیے محو پرواز تھا کہ طیارہ شکن توپوں سے اس پر حملہ کر دیا گیا۔ واقعے کی مزید تفصیلات سامنے نہیں آ سکی ہیں۔ غیر جانب دار ذرائع سے اس واقعے کی تصدیق نہیں ہو سکی ہے۔

العربیہ ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق شام میں باغیوں کی ترجمان جنرل انقلاب کونسل کی جانب سے فراہم کردہ اطلاعات کے مطابق شامی فوج نے اللاذقیہ کے نواحی علاقوں بھاری ہتھیاروں سے بمباری کی ہے۔

ادھر دمشق میں مشرقی الغوطہ کے مقام پر متمرکز شامی فوج نے مختلف قصبات اور گھروں پر بمباری کی ہے جس کے نتیجے میں بڑے پیمانے پر مکانات کو نقصان پہنچا ہے۔ شامی فوج نے دمشق کے قریب بلودان پہاڑوں میں باغیوں کے ٹھکانوں پر بیرل بم حملے بھی کیے ہیں جس میں بڑے پیمانے پر جانی نقصان کا اندیشہ ہے۔ تاہم بمباری سے متاثرہ علاقوں سے کوئی تازہ خبر موصول نہیں ہو سکی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں