.

اسرائیلی فوج کی کارروائی، فلسطینی خاتون شہید

فلسطینی خاتون آنسو گیس سے متاثر ہو کر ہسپتال داخل تھیں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

اسرائیلی فوج کی طرف سے آنسوگیس کے وحشیانہ استعمال سے بے ہوش ہونے والی فلسطینی خاتون شہید ہو گئی ہے۔ اس امر کا باضابطہ طور پر طبی حکام نے منگل کے روز اعلان کیا ہے، تاہم اسرائیلی فوج نے موت کی وجہ آنسو گیس کے بننے کو تسلیم کرنے سے انکار کر دیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق اسرائیلی فوج نے پیر کی شام چالیس سالہ فلسطینی خاتون کے گھر کے قریب آنسوگیس کا اندھا دھند استعمال کیا۔ جس سے ایک علیل فلسطینی خاتون بھی بری طرح متاثر ہوئی اور اسے سخت بری حالت میں ہسپتال لے جایا گیا۔

یہ واقعہ بیت اللحم کے شمال مغرب میں پیش آیا تھا۔ جہاں اسرائیلی سکیورٹی فورسز آئے روز فلسطینیوں کے ساتھ سلسلہ جبر جاری رکھتی ہیں۔ اس بارے میں اسرائیلی فوج کی ترجمان نے کہا ہے کہ '' اس خاتون کی موت واقع ہونے کا تعلق آنسو گیس سے نہیں ہے۔

ترجمان نے فلسطینیوں کے ساتھ فوجی تصادم کی تصدیق کی مگر اس بارے میں مزید تفصیلات دینے سے گریز کیا۔ واضح رہے صرف تین ماہ پہلے جنوری کے دوران بھی ایک 85 سالہ بوڑھی فلسطینی خاتون بھی اسی طرح کے ایک واقعے کے دوران شہید ہو گئی تھی۔ وہ بھی اپنے گھر کے اندر ہی اسرائیلی سکیورٹی فورسز کی طرف سے استعمال کیے گئے آنسو گیس سے متاثر ہوئی تھیں۔