اسرائیل اور فلسطینی حکام کے درمیان ملاقات آج متوقع

دونوں فریق امن مذاکرات جاری رکھنے پر یکسو ہیں: جین پاسکی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

امریکی دفتر خارجہ کے مطابق مشرق وسطی کے حوالے اسرائیل اور فلسطینی حکام کے نمائندوں کی ملاقات آج پھر متوقع ہے۔ یہ بات امریکی خاتون ترجمان جین پاسکی نے بتائی ہے۔ جین پاسکی کا کہنا ہے کہ اسرائیل اور فلسطینی اتھارٹی دونوں فریق اسرائیلی پولیس اہلکار کی مغربی کنارے میں ہونے والی ہلاکت کے باوجود امن مذاکرات کے حوالے سے پختہ عزم رکھتے ہیں۔

واضح رہے یہودی تہوار کے موقع پر پچاس سال سے کم عمر کے مسلمان مردوں کے مسجد اقصی میں داخلے پر پابندی لگا دی ہے جبکہ مغربی کنارے میں ایک خاتون بھی اسرائیلی فوج کے زہرناک آنسو گیس سے شہید ہو گئی ہے۔ امریکی وزارت خارجہ کی ترجمان نے کہا فریقین آج پھر ملاقات کرنے والے ہیں۔

ترجمان کے مطابق دونوں فریق 29 اپریل تک کی طے شدہ ڈیڈ لائن کو بڑھانے کے امکانات پر غور کریں گے۔ اس ماہ کے آغاز میں امن مذاکرات کا سلسلہ اس وقت جانے کا خطرہ پیدا ہو گیا تھا جب اسرائیل نے فلسطینی اسیران کی وعدے کے مطابق رہائی سے انکار کر دیا تھا۔ اسرائیل کا کہنا تھا کہ یہ رہائی صرف اس صورت ممکن ہو گی اگر فلسطینی حکام بھی امن مذاکرات کو توسیع دینے پر رضامند ہوں گے۔

جوابا فلسطینی حکام نے 15 بین الاقوامی معاہدات پر دستخط کیے جن میں جنیوا کنونشن کے ساتھ ایک معادے پر دستخط شامل تھے۔ خیال رہے امن مذاکرات امریکی وزیر خارجہ جان کیری کی کوششوں سے جولائی 2013 میں دوبارہ شروع ہوئے تھے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں