اردنی فوج نے شامی سرحد پر متعدد گاڑیاں تباہ کردیں

شام سے تین پہیوں والی گاڑیوں کی اردن کے علاقے میں داخل ہونے کی کوشش

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

اردن کی فضائِیہ نے خانہ جنگی کا شکار شام سے اپنے ملک کے سرحدی علاقے میں داخل ہونے والی متعدد بکتر گاڑیوں کو بمباری کرکے تباہ کردیا ہے۔

اردنی فوج نے بدھ کو ایک بیان میں کہا ہے کہ ''شامی فضائیہ کے لڑاکا طیاروں نے آج صبح مقامی وقت کے مطابق ساڑھے دس بجے کے قریب شام سے اردن میں داخل ہونے کی کوشش کرنے والی متعدد گاڑیوں کو تباہ کیا ہے''۔

فوج نے بیان میں مزید کہا ہے کہ ''ان گاڑیوں کو بمباری سے قبل خبردار کیا گیا تھا لیکن انھوں نے انتباہی فائر کو نظر انداز کیا جس کے بعد ان کو نشانہ بنایا گیا ہے''۔بیان کے مطابق ''فوج اس طرح کی دراندازی پر کوئی رو رعایت نہیں برتے گی''۔

ایک فوجی عہدے دار نے فرانسیسی خبررساں ادارے اے ایف پی کو بتایا ہے کہ ''یہ تین پہیوں والی گاڑیاں تھیں اور انھوں نے شمالی اردن میں روشید کے غیر محفوظ سرحدی علاقے سے داخل ہونے کی کوشش کی تھی۔

واضح رہے کہ اردن کے سرحدی محافظوں کی حالیہ ہفتوں کے دوران شام سے سرحدی علاقے میں داخل ہونے والے مسلح افراد کے ساتھ جھڑپیں ہوئی ہیں اور انھوں نے متعدد افراد کو گرفتار کیا ہے۔

دوسری جانب دمشق حکومت اردن پر باغی جنگجوؤں کی معاونت کے الزامات عاید کرتی رہتی ہے لیکن اردن ان الزامات کی تردید کرتا ہے۔اس کا کہنا ہے کہ اس نے شام کے ساتھ اپنی سرحد پر کنٹرول سخت کردیا ہے اور غیر قانونی طور پر سرحد عبور کرنے کے الزام میں متعدد افراد کو گرفتار کرکے سزائیں سنائی ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں