.

عراق: خود کش کار دھماکہ، 11 ہلاک

اگلے ہفتے متوقع انتخابات سے پہلے یہ ایک بڑی کارروائی ہے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

خود کش حملہ آور نے بارود سے بھری گاڑی پولیس کی چیک پوائنٹ سے ٹکرا دی ہے، جس سے کم از کم 11 افراد ہلاک ہو گئے ہیں۔ یہ واقعہ عراق کے دارالحکومت کے جنوب میں تقریبا 95 کلومیٹر کے فاصلے پر ہلہ میں پیش آیا ہے۔ سرکاری حکام کے مطابق اگلے ہفتے میں ہونے والے پارلیمانی انتخابات سے پہلے ایک بڑی کارروائی ہے۔

خودکش حملہ آور نے اس کارروائی کیلیے رش کے اوقات کا انتخاب کیا، تاکہ زیادہ سے زیادہ جانی نقصان ہو سکے۔ یہ دھماکہ ہلا شہر کے داخلی راستے پر قائم پولیس چیک پوائنٹ پر کیا گیا ہے۔

حکام کے مطابق خود کش دھماکے میں جمعرات کے روز ہونے والے دھماکے میں سات سویلین اور چار پولیس اہلکار ہلاک ہو گئے جبکہ 27 افراد زخمی ہو گئے ہیں۔ دھماکے سے 15 گاڑیوں کو بھی سخت نقصان ہوا ہے۔ عراق کے طبی ذرائع نے بھی ان ہلاکتوں کی تصدیق کر دی ہے۔

واضح رہے شیعہ کمیونٹی کی اکثریت کے حامل شہر ہلہ میں حالیہ دنوں میں ہی بد امنی پھیلی ہے۔ پچھلے ماہ بھی ایک خود کش حملہ آور نے کار میں بھرے بارود سے دھماکہ کر کے اسی علاقے میں 36 افراد کو ہلاک کر دیا تھا۔ جبکہ عراق میں بدامنی کی یہ لہر پچھلے سال سے جاری ہے۔

پچھلے سال عراق میں ہونے والی بد امنی سے 8868 لوگ مارے گئے تھے۔ 2013 کے صرف پہلے دو مہینوں کے دوران 1400 افراد اس دہشت گردی کی بھینٹ چڑھ گئے تھے۔ 2011 میں امریکی فوج کے انخلاء کے بعد اگلے ہفتے میں عراقی پارلیمنٹ کے پہلے انتخابات متوقع ہیں۔ عراقی پارلیمنٹ کی 328 نشستوں کیلیے 9000 امیدوار میدان میں موجود ہیں۔