مرسی کیخلاف بغاوت والے شکست کھائیں گے: مرشد عام اخوان

سزائے موت ملنے کے بعد عدالت میں پیشی، ڈھونگ ختم ہو گا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

خوان المسلمون کے مرشد عام محمد بدیع نے اپنے سمیت683 دیگر اخوانیوں کو عدالت کی طرف سے سنائی گئی سزا پر تنقید کرتے ہوئے سخت پیرائے میں کہا '' اسلام پسند منتخب صدر محمد مرسی کو برطرف کرنے والے شکست کھائیں گے۔''

مرشد عام نے یہ تبصرہ پیر کے روز عدالت کی طرف سے سنائی گئی سزا پر اس وقت کیا جب انہیں ایک اور مقدمے کی سماعت کے موقع پر عدالت میں پیش کیا گیا۔ انہیں بدھ کے روز بھی آہنی پنجرے میں بند کر کے عدالت میں پیش کیا گیا تھا۔ محمد بدیع آج جس مقدمے میں پیش کیے گئے اس میں مصر کے پہلے منتخب صدر محمد مرسی سمیت اخوان کے بعض دیگر رہنماوں کو بھی ملزم بنایا گیا ہے۔

محمد مرسی 3 جولائی 2013 سے قید ہیں، جبکہ مرشد عام 14 اگست 2013 کو سکیورٹی فورسز کے کریک ڈاون کے دوران اپنے جواں سال بیٹے کی ہلاکت کے بعد حراست میں لیے گئے تھے۔ تب سے یہ دونوں اہم رہنما اخوان کے بقیہ ذمہ داران کے ساتھ جیلوں میں ہیں۔

683 اخوانیوں کو سزائے موت سنانے پر اقوام متحدہ کے سیکرتری جنرل بان کی مون نے کہا ہے یہ فیصلہ مصر کے استحکام کے لیے اچھا نہیں ہے۔ اس سے پہلے ماہ مارچ میں 529 اخوانیوں کو اسی انداز میں اکٹھے سزائے موت سنائے جانے پر بھی عالمی سطح پر سخت رد عمل سامنے آیا تھا۔

عدالت میں پیشی کے موقع پر محمد بدیع نے کہا '' میں نے اس ٹرائل کا سامنا نہیں کیا ، نہ مجھے پیش کیا گیا ہے، اس لیے کہتا ہوں فوج کی طرف سے جولائی 2013 میں کی گئی بغاوت واپس ہو گی۔'' عدالت میں پیشی کے موقع پر معزول صدر محمد مرسی نے بات کرتے ہوئے کہا ''یہ ڈھونگ ختم ہو جائے گا۔'' واضح رہے محمد مرسی کو تین مقدمات کا سامنا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں