''العربیہ'' ٹیم کی حراست اور رہائی، ویڈیو ٹیپ ضبط

ٹیم کے خلاف کارروائی زیر زمین میٹرو کے سربراہ نے کرائی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

مصر کے دارالحکومت قاہرہ میں ''العربیہ'' کے عملے کو زیر زمین میٹرو کے سب وے پر کچھ دیر کیلیے حراست میں رکھنے کے بعد چھوڑ دیا گیا ہے۔ اس دوران مصر کے سکیورٹی اہلکاروں نے ''العربیہ'' کے عملے کے پاس موجود ان کی ویڈیو ٹیپس بھی ضبط کر لیں۔

ٹی وی چینل کا یہ عملہ ''العربیہ'' کے پروگرام ''الشارع المصری'' کے حوالے سے قاہرہ سب وے کے سربراہ میجر جنرل اسماعیل النجدی کا ان کے دفتر میں انٹرویو کرنے کیلیے گیا تھا۔ النجدی نے پروگرام کے میزبان کے ایک سوال پر اعترض کیا تھا۔ یہ سوال میزبان زوہا نے میٹرو کے تصادم اور ٹوٹ پھوٹ کے حوالے سے پوچھا تھا۔ جس پر اسماعیل النجدی نے اپنے سٹاف کو حکم دیا کہ ''العربیہ'' کی ٹیم کو بند کر دیا جائے اور اس سے انٹرویو کے ٹیپ چھین لیے جائیں۔

بعد ازاں رہائی مل گئی ''العربیہ'' ٹیم نے متعلقہ پولیس سٹیشن میں اس واقعے کی شکایت درج کرا دی۔ واضح رہے صحافیوں کی گرفتاری کے واقعات اس سے پہلے بھی پیش آ چکے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں