.

ایران سعودی عسکریت پسندوں کو تربیت فراہم کرنے میں ملوث

عسکریت پسندی میں ملوث سعودی کو گیارہ سال قید کی سزا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب کی ایک فوجداری عدالت نے ملک میں تخریب کاری اور بدامنی پھیلانے کے الزام میں ایک شہری کو گیارہ سال قید اور رہائی کے بعد اتنی ہی مدت کے لیے بیرون ملک سفر پر پابندی کی سزا کا حکم دیا ہے۔ ملزم کو یہ سزا اس لیے سنائی گئی کیونکہ اس نے جانتے بوجھتے ہوئے یہ بات حکام کو نہیں بتائی کہ ایران، سعودی عسکریت پسندوں کو ملک میں بدامنی اور فساد پھیلانے کے لیے تربیت فراہم کر رہا ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق عدالت کی جانب سے جاری کردہ تفصیلی فیصلے میں کہا گیا ہے کہ سزا پانے والے ملزم کا بیرون ملک عسکریت پسندوں سے تعلق ثابت ہوا ہے۔ اس نے ملک کے خلاف ہونے والی سازشوں کی پردہ پوشی کی۔ سعودی نوجوانوں کو عسکری تربیت فراہم کرنے کے لیے ایران عسکری ماہرین بھجواتا رہا ہے، لیکن اس نے یہ راز چھپائے رکھا۔

دیگر الزامات میں حاکم وقت کی اجازت کے بغیر قتال کی تیاری، کالعدم تنظیموں کے ساتھ تعلق اور ان کے لیے عطیات جمع کرنا، افغانستان کے لیے جنگجو بھرتی کرنے، عراقی جنگجوؤں کی مالی معاونت اور دہشت گردوں کو پناہ دینے جیسے الزامات عائد کیے گئے ہیں۔