.

لبنان: "کورونا" وائرس میں مبتلا پہلے مریض کی تشخیص

متاثرہ مریض کا علاج جاری، شہریوں کو سخت حفاظتی تدابیر کی ہدایت

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب میں "کورونا" وائرس سے ہونے والی اموات کے بعد اب یہ مہلک مرض لبنان پہنچ گیا ہے۔ لبنانی وزیر صحت وائل ابو فاعور کے مطابق بیروت کے ایک اسپتال میں پھیپھڑوں میں شدید انفیکشن کے مریض کو لایا گیا۔ ڈاکٹروں نے ابتدائی معائنے کے بعد بتایا کہ مریض "کورونا" وائرس کے باعث متاثر ہوا ہے، تاہم اس کا علاج جاری ہے۔ لبنان میں اس وائرس کا یہ پہلا کیس ہے۔

لبنانی وزیر صحت کے دفتر سے جاری ایک بیان میں بتایا گیا ہے کہ عوام الناس کو "کورونا" وائرس کے خطرات سے متعلق آگاہ کیا جا رہا ہے تاکہ وہ اپنے طور پر اس مہلک وائرس سے بچنے کے لیے تمام ضروری اقدامات کریں۔ حکومت بھی اس ضمن میں تمام ضروری تدابیر اختیار کر رہی ہے۔

ابو فاعور کا کہنا ہے کہ "کورونا" وائرس کا لبنان میں پہنچنا تشویشناک ہے لیکن حکومت اور ماہرین صحت اسے مزید پھیلنے سے روکنے کے لیے تمام ضروری تدابیر اختیار کر رہے ہیں۔ عوام الناس سے بھی گذارش ہے کہ وہ ایسے کسی بھی کیس کو دیکھنے کے بعد فوری طبی معائنہ کرائیں تاکہ بر وقت علاج ممکن بنایا جا سکے۔

لبنانی وزیر کا مزید کہنا تھا کہ "کورونا" وائرس خلیجی ممالک میں پھیل رہا ہے اور وہاں سے اس کے جراثیم دوسرے ملکوں میں منتقل ہو رہے ہیں تاہم عوام کو اس سے پریشان اور خوفزدہ ہونے کی ضرورت نہیں ہے۔ بعد ازاں وزیر صحت نے سیکرٹری ہیلتھ عاطف مجدلانی کے ہمراہ بیروت ہوائی اڈے کا بھی دورہ کیا۔ انہوں نے ہوائی اڈے کے طبی عملے اور دیگر ملازمین کو مکمل حفاظتی انتظامات اختیار کرنے کی ہدایت کی۔