.

شام، ترکی سرحد کے نزدیک کار بم دھماکا، 29 افراد ہلاک

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

شام اور ترکی کے درمیان واقع سرحدی گذرگاہ باب السلامہ کے نزدیک شامی علاقے میں کار بم دھماکا ہوا ہے جس کے نتیجے میں انتیس افراد ہلاک اور متعدد زخمی ہوگئے ہیں۔

برطانیہ میں قائم شامی آبزرویٹری برائے انسانی حقوق کی اطلاع کے مطابق جمعرات کو یہ کار بم دھماکا ایک کار پارک میں ہوا ہے۔مرنے والوں اور زخمیوں میں خواتین اور بچے بھی شامل ہیں۔

شامی کارکنان نے بم دھماکے کے مہلوکین اور مجروحین کی خوفناک تصاویر آن لائن پوسٹ کی ہیں جن میں ان کے جسمانی اعضا بکھرے پڑے ہیں اور بعض لاشیں جل کر سیاہ ہوچکی ہیں۔

واضح رہے کہ اس علاقے میں قبل ازیں بھی بم دھماکے ہو چکے ہیں۔فروری میں باب السلامہ کے نزدیک شامی علاقے میں بم دھماکے میں چھے افراد ہلاک اور پینتالیس زخمی ہوگئے تھے۔

اس علاقے میں شام سے تعلق رکھنے والے اسلامی جہادیوں کا قبضہ ہے۔ان کی جنوری کے آغاز کے بعد سے دولت اسلامی عراق وشام (داعش) سے تعلق رکھنے والے سخت گیر جنگجوؤں سے لڑائی جاری ہے۔

ترکی اور شام کے درمیان واقع ایک اور بارڈر کراسنگ باب الہوا پر بھی متعدد بم دھماکے ہوچکے ہیں۔یہ بارڈر کراسنگ شام کے شمالی صوبہ ادلب میں واقع ہے۔جنوری میں اس علاقے میں دو خودکش حملہ آوروں نے دھماکے کیے تھے جن کے نتیجے میں سولہ افراد ہلاک ہوگئے تھے۔شامی حکومت ماضی میں باغی جنگجوؤں (اس کے بہ قول دہشت گردوں) پر ان بم دھماکوں کے الزامات عاید کرتی رہی ہے۔