.

اسرائیلی فوجی حملوں میں دو فلسطینی شہید، متعدد زخمی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

فلسطین کے مقبوضہ مغربی کنارے کے مرکزی شہر رام اللہ میں "عوفر" فوجی جیل کے باہر احتجاج کرنے والے فلسطینیوں پر قابض اسرائیلی فوجیوں نے گولیاں چلائی ہیں، جس کے نتیجے میں کم سے کم دو فلسطینی شہید اور متعدد زخمی ہو گئے ہیں۔ فلسطینی میڈیکل اور سیکیورٹی ذرائع نے دو فلسطینیوں کی شہادت کی تصدیق کی ہے۔

تفصیلات کے مطابق صہیونی فوجیوں نے "عوفر" جیل کے باہر احتجاج کرنے والے فلسطینیوں کو منتشر کرنے کے لیے پہلے آنسو گیس کی شیلنگ اور لاٹھی چارج کیا، پھر ان پر براہ راست گولیاں چلا دیں، جس کے نتیجے میں سترہ سالہ محمد عودہ اور 20 سالہ مصعب نوارہ شدید زخمی ہوگئے۔ دونوں کو فوری طور پر اسپتال لے جایا گیا جہاں وہ زخموں کی تاب نہ لا کر دم توڑ گئے۔ مارے جانے والے دونوں فلسطینی نوجوانوں کے سینوں میں گولیاں لگیں ہیں۔

صہیونی فوج کی جانب سے فلسطینی شہریوں پر یہ حملہ اس وقت کیا گیا جب وہ فلسطین پر اسرائیلی قبضے کے چھیاسٹھ برس پورے ہونے پر اپنےغم وغصے کے اظہار کے لیے ملک بھر میں ریلیاں اور جلسے جلوس نکال رہے تھے۔

خیال رہےکہ فلسطینی ہر سال پندرہ مئی کو قیام اسرائیل کی یاد میں"یوم نکبہ" کے دن کے طور پر مناتے ہیں۔ اس روز فلسطین بھر میں اسرائیل کے خلاف نفرت کا اظہار کیا جاتا ہے۔ "یوم نکبہ" ریلیوں پر فائرنگ اور فلسطینیوں کی شہادت کا یہ پہلا واقعہ نہیں ہے بلکہ ماضی میں بھی اسرائیلی فوج کےہاتھوں اس نوعیت کے مظاہروں کے دوران نہتے فلسطینی مارے جاتے رہے ہیں۔