سعودی خاندان 6691 بچوں کو گود لیں گے

پچھلے سال 391 بچے گود لیے گئے، چھاتی کا دودھ شرط اول

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی خاندان چھ ہزار چھ سو اکانوے ایسے بچوں کو اپنائیں گے جو یتیم ہیں یا کسی اور وجہ سے اپنے والدین سے محروم اور دور ہو گئے ہیں۔ یہ بات سعودی وزارت انصاف نے بتائی ہے۔ اس سلسلے وزارت انصاف اور وزارت داخلہ ضروری کارروائی عمل میں لا رہی ہے۔

واضح رہے 2013 میں سعودی عدالتوں نے 391 بچوں کے سعودی شہریوں کی طرف سے اپنائے جانے کا عمل مکمل کیا تھا تاہم رواں سال یہ تعداد پچھلے سال کے مقابلے میں کہیں زیادہ ہے۔

سماجی امور کی نگران وزارت میں یتیم بچوں کی دیکھ بھال کرنے کے شعبے کے ڈائریکٹر عید البقامی کے مطابق سعودی خاندانوں کی طرف سے بچے گود لینے کیلیے بڑی تعداد نے خود کو پیش کیا ہے۔ سعودی شہریوں کی طرف سے اس خواہش اور پیش کش پر مبنی درخواستیں ملک بھر میں قائم وزارت سماجی امور کے ذیلی دفاتر کو موصل ہوئی ہیں۔

عید البقامی نے بتایا ان بچوں کو خاندانوں کے حوالے کرنے سے پہلے ایک جانب پولیس ضروری کارروائی مکمل کر رہی ہے اور دوسری جانب ان بچوں کو ضروری چیک اپ وغیرہ کیلیے ہسپتالوں میں رکھا گیا ہے، جہاں ان کی خوراک اور صحت کا پورا خیال رکھا جا رہا ہے۔

ڈائریکٹر عید البقامی کے مطابق ان کا محکمہ علاقائی گورنرز کی ہدایت پر ایسے بچوں کو اپنی نگرانی میں لیتا ہے۔ بچوں کو گود لینے والے خاندانوں سے کہا گیا ہے انہیں شیر خوار بچوں کیلیے دودھ پلانے والی خواتین کا انتظام کرنا ہو گا۔ وزارت کی طرف سے یہ بنیادی شرائط میں سے ایک شرط ہے

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں