.

جدہ: کُتے کا گوشت فروخت کے شبے میں ہوٹلوں پر چھاپے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب کے مشرقی ساحلی شہر جدہ میں ایک نامعلوم مقام پر کُتے کا گوشت پکائے جانے سے متعلق ایک ویڈیو کے سامنے آنے کے بعد شہر کی انتظامیہ متحرک ہو گئی اور شہر بھر کے ریستورانوں اور چھوٹے ہوٹلوں پر چھاپے مارے جا رہے ہیں۔ تاہم ابھی تک کسی ہوٹل سے مشکوک گوشت برآمد نہیں ہو سکا ہے۔

جدہ میونسپلٹی کے ترجمان سامی الغامدی نے "العربیہ ڈاٹ نیٹ" سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ شہر میں کتے کے گوشت کو پکانے اور فروخت کیے جانے کی ویڈیو سامنے آنے پر مانیٹرنگ ٹیموں نے ہوٹلوں پر چھاپے مارنا شروع کر دیے ہیں لیکن ابھی تک انہیں کہیں سے بھی کچا یا پکایا ہوا مشکوک گوشت نہیں ملا ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کو اپنے ذرائع سے اطلاع ملی ہے کہ جدہ میں کچھ سماج دشمن عناصر چوری چھپے کتے کا گوشت پکانے کے بعد گاہکوں کو فروخت کر رہے ہیں تاہم وہ یہ مکروہ دہندہ کھلے عام نہیں کر رہے بلکہ مخصوص لوگ ان کے گاہک ہیں۔ کتوں کا پکا ہوا گوشت عام ہوٹلوں پر نہیں بلکہ خفیہ مقامات سے فراہم کیا جا رہا ہے۔ اگر یہ کھلے عام ہوٹلوں میں فروخت ہوتا تو میونسپلٹی اور پولیس کب کی اس میں ملوث لوگوں کو گرفتار کر چکی ہوتی۔