.

"بحرینی سفیر کی قطر واپسی فی الحال ممکن نہیں"

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

بحرین کے وزیر خارجہ الشیخ خالد بن احمد آل خلیفہ کا کہنا ہے منامہ کے سفیر کی قطر واپسی فی الحال ممکن نہیں۔ انہوں نے کہا کہ اختلافات کا جائزہ لے کر ان کے خاتمے کی تجویز دینے والی کمیٹی کے فیصلے کا انتظار ہے۔

ان خیالات کا اظہار الشیخ خالد بن احمد آل خلیفہ نے انسانی حقوق کی عرب عدالت کے موضوع پر ہونے والی کانفرنس کے موقع پر کیا۔ ان کا کہنا تھا کہ "ہمارے سفیر کی قطر واپسی ابھی ممکن نہیں، اس پر کام ہو رہا ہے۔"

خلیجی ممالک نے سترہ اپریل کو ایک معاہدہ کے تحت سعودی عرب، متحدہ عرب امارات اور بحرین کے قطر کے ساتھ اختلافات ختم کرنے کا عندیہ دیا تھا۔

مذکورہ تینوں خلیجی ملکوں نے پانچ مارچ کو ایک غیر معمولی اقدام اٹھاتے ہوئے قطر سے اپنے سفیر واپس بلا لیے تھے۔ تینوں ملکوں نے الزام عاید کیا تھا کہ قطر ان کے داخلی معاملات میں مداخلت کر رہا ہے۔ نیز قطر کی جانب سے اسلامی تحریکوں کو مدد سے خطے کی سلامتی اور استحکام کو خطرات لاحق ہو رہے ہیں۔