.

لبنان: صدارتی انتخاب میں ناکامی، سلامتی کونسل کو تشویش

پارلیمنٹ بیرونی دباو اور تاخیر کے بغیر نیا صدر منتخب کرے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل نے لبنان کے صدر کا انتخاب ابھی تک ممکن نہ ہو سکنے پر تشویش ظاہر کی ہے اور بلاتاخیر صدارتی انتخاب کرانے کا مطالبہ کیا ہے۔

سلامتی کونسل کی طرف سے متفقہ طور پر جاری کیے گئے اعلامیے میں لبنانی پارلیمنٹ پر زور دیا گیا ہے کہ وہ اپنی جمہوری رواِیت کو جاری رکھتے ہوئے جلد سے جلد اور بیرونی دباو کے بغیر صدارتی انتخاب ممکن بنائے۔

واضح رہے لبنانی پارلیمنٹ پچھلے دو ماہ کے دوران صدارتی انتخاب کیلیے پانچ مرتبہ اجلاس منعقد کر چکی ہے لیکن ہر بار کورم پورا نہ ہونے کی وجہ سے نیا صدر منتخب کرنے میں ناکام رہی ہے۔ اسی دوران صدر مائیکل سلیمان کی مدت صدارت 25 مئی کو ختم ہو گئی ہے۔

سلامتی کونسل نے عبوری حکومت کیلیے اپنی مکمل حمایت کا اعادہ کیا اور لبنان کے اقتصادی استحکام کیلیے بین الاقوامی تعاون پر زور دیا تاکہ لبنان سلامتی اور انسانی بنیادوں پر موجود چیلنجوں کا مقابلہ کر سکے۔

عالمی ادارے نے لبنان کی تمام جماعتوں کو شامی بحران سے الگ رہنے کیلیے کہا۔ خیال رہے حالیہ برسوں میں سیاسی مسائل کا شکار رہنے والے لبنان کی پارلیمنٹ کے لیے صدر کا انتخاب مشکل ہو گیا ہے۔