.

دمشق کی جوبر کالونی پر باغیوں کا پوری قوت سے حملہ

دارالحکومت کا محاصرہ توڑنے کے لیے فیصلہ کن آپریشن شروع

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

شام میں باغیوں کی نمائندہ فوج 'جیش الحر' نے دارالحکومت دمشق کا سرکاری فوجوں اور جنگجوؤں کی جانب سے جاری محاصرہ توڑنے کے لیے ایک بڑا حملہ کیا ہے۔ اس حملے میں درجنوں سرکاری فوجیوں اور ان کے حامی جنگجوؤں کے مارے جانے کی اطلاعات ہیں۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق 'جیش الحر' نے ویڈیو شیئرنگ ویب سائٹ یو ٹیوب پر تازہ آپریشن کی ایک ویڈیو فوٹیج پوسٹ کی ہے جس میں دمشق کے قریب جوبر کالونی میں سرکاری فوج کے زیر استعمال متعدد عمارتوں کو دھماکوں سے تباہ ہوتے دکھایا گیا ہے۔

جیش الحُر نے اپنے بیان میں کہا ہے کہ "ہفتے کے روز جوبر کالونی کو آزاد کرانے اور دمشق شہر کا محاصرہ توڑنے کے لیے 'دیوار توڑ' کوڈ نام سے آپریشن شروع کیا گیا تھا۔ کالونی میں موجود عباسین گراؤنڈ کے قریب سرکاری فوج کے زیر استعمال چار عمارتوں کو خالی کرا لیا گیا ہے جبکہ ایک عمارت کو بارود سے اڑا دیا گیا جس کے نتیجے میں کم سے کم چالیس سرکاری فوجی ہلاک ہو گئے ہیں۔

ویڈیو فوٹیج میں بھی متعدد عمارتوں میں سرکاری گماشتوں کی نقل وحرکت دیکھی جا سکتی ہے۔

جیش الحر کا کہنا ہے کہ دمشق کا محاصرہ توڑنے کے لیے فیصلہ کن جنگ شروع ہو چکی ہے اور انہیں توقع ہے کہ چند دنوں کے اندر آزاد فوج دمشق کا محاصرہ توڑ کر شہر میں داخل ہونے میں کامیاب ہو جائے گی۔