.

نوری المالکی عالمی دہشت گرد ہے: طارق ہاشمی

"مالکی پر تقنید کرنے والے سب 'داعش' کے لوگ ہیں"

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

عراق میں جہاں عسکریت پسندوں نے حکومت کا ناک میں دم کر رکھا ہے ملک کے سرکردہ سیاسی پنڈت بھی ایک دوسرے کے خلاف سخت ترین الفاظ میں تنقید کر رہے ہیں۔

عراق کے سرکاری ٹیلی ویژن نے وزیر اعظم نوری المالکی کی پالیسیوں پر تنقید کرنے والوں کو "داعش" کے ساتھی قرار دیا ہے جبکہ دوسری جانب مفرور نائب صدر طارق الھاشمی کا کہنا ہے کہ نوری المالکی "عالمی دہشت" گرد ہے۔

عراق میں اعلیٰ سطح پر سیاسی حلقوں میں تنقید نے سیاسی میدان میں ایک نئی کشیدگی پیدا کر رکھی ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق گذشتہ روز سرکاری ٹیلی ویژن چینل پر حکومت مخالف سیاست دانوں کے نام لے کر ان کی دھنائی کی گئی۔ ٹی وی رپورٹ میں کہا گیا کہ نائب صدر طارق الھاشمی، اثیل النجیفی، علی الحاتم، رافع الرفاعی اور ان کے ساتھی عراق کو تقسیم کرنے کی سازش کر رہے ہیں۔

طارق ہاشمی کا جوابی وار

ترکی میں جلاوطنی کی زندگی گذارنے والے عراق کے نائب صدر طارق الھاشمی نے نوری المالکی نواز ٹی وی کے جواب میں وزیر اعظم کو سخت الفاظ میں تنقید کا نشانہ بنایا ہے۔

الحدث نیوز سے گفتگو کرتے ہوئے طارق ہاشمی نے نوری المالکی اور اس کے ساتھیوں کو بغداد پر مسلط "نئے صفوی حکمران" قرار دیا۔

انہوں نے کہا کہ اگر اہل سنت مسلک کے حامیوں کے مطالبات کے حق میں آواز اٹھانا، جیلوں میں ڈالے گئے معصوم لوگوں کی حمایت کرنا، ان کے نظریات اور عقائد کا دفاع کرنا دہشت گردی ہے تو پوری دنیا سن لے طارق ہاشمی پہلا دہشت گرد ہو گا۔

طارق ہاشمی کا کہنا تھا کہ میں نے اعتدال پسندانہ سیاست کے فروغ کی کوشش کی مگر میں اس نتیجے پر پہنچا ہوں کہ اگر میں سنی اور عرب مسلمان ہوں تو یہی میرا سب سے بڑا جرم ہے۔

ایک سوال کے جواب میں طارق ہاشمی نے دو ٹوک الفاظ میں کہا کہ نوری المالکی عالمی دہشت گرد ہے۔ انہوں نے استفسار کیا کہ سنہ 1980ء کی دہائی میں عراق میں بارود سے بھری گاڑیاں کس نے داخل کی تھیں؟ وزارت اطلاعات کے ہیڈ کواٹرز کو کس نے تباہ کیا تھا؟ بیروت میں عراقی سفارت خانے پر کن لوگوں نے حملہ کیا؟

امیر کویت کے قافلے کو دہشت گردی کا نشانہ کس نے بنایا اور وہ تمام لوگ کون تھے جو عراق کے طیارے اغواء کرتے رہے ہیں؟ یہ سب نوری المالکی کا کیا دھرا ہے۔ مالکی عالمی دہشت گرد ہے۔ گذشتہ صدی کے 80 کے عشرے سے وہ عراق میں دہشت گردی کو فروغ دے رہا ہے۔