.

نوری المالکی نے مستعفی ہونے سے انکار کر دیا

"میں قومی اتفاق رائے کی حکومت بنانے کا پابند نہیں"

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

عراقی وزیر اعظم نوری المالکی نے ملک کو بحران سے نکالنے کے لیے قومی اتفاق رائے کی حکومت تشکیل دینے کے مطالبات ماننے سے انکار کر دیا ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ وہ عراقی پارلیمان کا افتتاحی اجلاس بلوانے کے پابند ہیں تاکہ نئی حکومت تشکیل دی جا سکے۔

یہ پیش رفت ایک ایسے وقت سامنے آئی ہے کہ جب عراقی منظر نامہ گنجلک ہوتا جا رہا ہے اور اس پیچیدہ صورتحال کے تناظر میں نوری المالکی سے اقتدار چھوڑنے کے مطالبات زور پکڑتے جا رہے ہیں۔ عراق کے مختلف حصوں میں انقلابی قبائل اور دوسرے مسلح جنگجووں نے نوری المالکی حکومت کے کھلی جنگ شروع کر رکھی ہے۔