.

حماس کے خلاف اسرائیل کے نئے لالی پاپ

مغربی کنارے کے عوام نے اسے نفسیاتی جنگ قرار دے دیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

اسرائیل نے مغربی کنارے اور رام اللہ کے شہریوں کو حماس کے خلاف ایک میٹھی سازش کا سہارا لیتے ہوئے ایک نیا لالی پاپ دینے کی کوشش شروع کر دی ہے۔

تفصیلات کے مطابق فلسطینی عوام نے رمضان کریم کے استقبال کے لیے اپنے گلی کوچوں میں جس والہانہ پن کا اہتمام کر رکھا ہے اسرائیلیوں نے اسے اپنے لیے مفید بنانے کی کوشش کرتے ہوئے گلی محلوں میں ایسے لالی پاپ تقسیم کیے ہیں جن کے ساتھ حماس کے خلاف نعرے درج ہیں۔

واضح رہے فتح اور حماس کے درمیان ماہ اپریل میں ہونے والی مفاہمت کے نتیجے میں متفقہ حکومت کے بعد اسرائیل کے لیے حماس پہلے سے بھی بڑے چیلنج کے طور پر سامنے آئی ہے۔

فلسطینی نیوز ایجنسی "معا" کے مطابق رمضان کے آغاز کے ساتھ ہی نابلس اور رام اللہ میں ایسے لالی پاپ پھینکے گئے ہیں جن پر درج ہے کہ '' حماس کی طرف سے مغربی کنارے میں زندگی تلخ کیے جانے کے بعد رمضان کریم کے حوالے سے کچھ مٹھائیاں۔''

خبر رساں ادارے کے مطابق حماس کے خلاف عوام کو ابھارنے کی یہ ایک نئی مہم ہے۔ مقامی لوگوں نے خبر رساں ادارے سے گفتگو کرتے ہوئے کہا'' لالی پاپ اور حماس مخالف تحریریں اسرائیلی فوج کی طرف سے نفسیاتی جنگ کا حصہ ہیں۔ ''

واضح رہے اس طرح کی مٹھائیاں اور لالی پاپ پہلی بار تقسیم نہیں کیے گئے ہیں۔ ایسی کوششیں پہلے بھی کی جا چکی ہیں۔ اس سے پہلے نابلس میں ایسے ماچس باکس بھی تقسیم کیے گئے تھے جن پر حماس کے خلاف تحریریں درج تھیں۔

یاد رہے تین لاپتہ اسرائیلیوں کی تلاش کے لیے شروع کیے گئے آپریشن کے دوران اسرائیلی فوج کے ہاتھوں 130 فلسطینی زخمی ہوئے اور 600 سے زائد کو حراست میں لیا گیا ہے۔ اسرائیلی فوج نے مجموعی طور 1350 چھاپے مارے ہیں۔