.

کرد ریاست اور اردن کے حق میں نیتن یاہو کی اپیل

ہماری ضرورت ہے کہ داعش کے خلاف مدد دی جائے: اسرائیل

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

اسرائیلی وزیر اعظم بنجمن نیتن یاہو نے عالمی برادری سے اسلامی انتہا پسندوں سے نمٹنے کے لیے اردن اور عراقی کردستان کی آزادی کے لیے کردوں کی حمایت کرنےکی اپیل کی ہے۔

اسرائیلی وزیر اعظم کے بقول '' یہ ہماری ضرورت ہے کہ اسلامی انتہا پسندوں کے خلاف اردن حکومت کی مدد کی جائے نیز عراق میں آزاد کرد ریاست کی حمایت کی جائے۔ وہ تل ابیب میں انسٹیٹیوٹ آف نیشنل سکیورٹی سٹڈیز کے نام سے قائم تھنک ٹینک سے خطاب کر رہے تھے۔

بنجمن نیتن یاہو نے کہا '' میرے خیال میں یہ ہمارا مشترکہ مفاد ہے کہ اردن کی طرح ایک اعتدال پسند ریاست ہو جو اپنا دفاع بھی کر سکتی ہو۔ ''

اسرائیلی وزیر اعظم کے یہ خیالات ان اطلاعات کے بعد سامنے آئے ہیں جن میں داعش کے عسکریت پسندوں کے قدم اردن کی طرف بڑھنے اور عراق کے کئی علاقوں پر داعش کے قبضے سے اسرائیلی حکام کی خوفزدہ گی ظاہر ہوتی ہے۔

خیال رہے داعش کے عسکریت پسند شام کے کئی علاقوں پر اپنی گرفت پہلے ہی مضبوط کر چکے ہیں اور انہوں نے عراق و شام کے زیر قبضہ علاقوں پر اسلامی خلافت قائم کرنے کا بھی اعلان کر دیا ہے۔

تذویراتی امور کو دیکھنے والے تھنک ٹینک سے خطاب کرتے ہوئے یاہو نے دو ٹوک انداز میں عراق کی تقسیم کی بات کی اور کہا ''عراق کے کرد علاقے میں ایک آزاد کرد ریاست کے قیام کی مدد کی جانی چاہیے۔ انہوں نے خبردار کیا داعش کے جنگجو اردن سے بھی دور نہیں ہیں۔

واضح رہے امریکی وزیر خارجہ جان کیری بھی اردن کے معاملے پر پچھلے ہفتے خطے کے ممالک سے مذاکرات کر چکے ہیں۔