.

مساجد، حماس کی قیادت اسرائیلی بمباری کا خصوصی ہدف

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

فلسطین کے طبی ذرائع نے بتایا ہے کہ غزہ پر بمباری کا سلسلہ ہفتے کے روز بھی جاری رہا جس کے بعد پانچ روز سے مسلسل جاری ان حملوں میں شہید ہونے والے بچوں، عورتوں اور دیگر فلسطینیوں کی تعداد 121 ہو گئی۔

ادھر ایک سیکیورٹی ذریعے نے بتایا کہ ہفتے کی روز کی جانے والی بمباری کا ہدف وسطی غزہ کی پٹی میں نصیرات کیمپ کی دو مساجد تھیں۔ اسرائیلی جیٹ طیاروں نے جنوبی غزہ کے علاقے خان یونس میں بھی ایک اور مسجد کو نشانہ بنایا۔ انہی علاقوں میں اسلامی تحریک مزاحمت [حماس] کے متعدد رہنماوں کے گھروں پر بھی بمباری کی گئی۔

ایک فلسطینی میڈیکل ذریعے نے بتایا کہ غزہ کی مشرقی کالونی التفاح میں تین فلسطینی ایک پارک پر حملے میں شہید ہوئے جبکہ تین فلسطینی شمالی غزہ کے علاقے جبالیا میں لکڑی کے سٹور پر اسرائیلی بمباری سے لقمہ اجل بنے۔

شمالی غزہ کی پٹی میں بیت لاھیا کے علاقے میں اسپیشل افراد کے ایک خیراتی ادارے کو بھی ہفتہ کو علی الصباح نشانہ بنایا گیا جس کے نتیجے میں تین مزید فلسطینی اپنی جان سے گئے۔

شمالی غزہ میں جبالیا مہاجر کیمپ پر اسرائیلی فضائی حملے میں پانچ فلسطینی شہید اور دو دوسرے زخمی ہوئے جبکہ وسطی غزہ کی پٹی میں دیر البلح کے علاقے میں اسرائیل جیٹ طیاروں کی بمباری نے دو فلسطینیوں کی جان لے لی۔ اس کارروائی میں 20 افراد زخمی ہوئے۔