.

عراقی سنی اتحاد نے سلیم الجبوری کو سپیکر نامزد کر دیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

عراق کے ایک سینیئر سنی سیاستدان نے بتایا ہے کہ ملک میں اہل سنت مسلک کی پیروکار سیاسی جماعتوں کے نمائندہ پارلیمانی اتحاد نے رکن پارلیمنٹ سالم الجبوری کو نئے ایوان کا سپیکر نامزد کیا ہے۔

عراق کی پارلیمنٹ کی تمام بڑی سنی جماعتوں پر مشتمل نئے سیاسی پارلیمانی اتحاد 'پیٹریاٹک الائنس' کے سرکردہ رہنما ظافر العانی نے ہفتے کی رات بتایا ہے کہ"ہم نے سالم جبوری کا نام سپیکر کے عہدے کے لئے نامزد کیا ہے۔"

سالم الجبوری ایک معتدل سنی اسلام پسند کے طور پر جانے جاتے ہیں۔

عراقی پارلیمنٹ اتوار کے روز ہونے والے اجلاس میں سپیکر کا انتخاب کرے گی۔ یہ عمل عراقی قومی انتخابات کے تین ماہ بعد حکومت کی تشکیل کی جانب پہلا عمل سمجھا جا رہا ہے۔

بغداد کو اس وقت انتہائی مشکل حالات کا سامنا ہے کیونکہ اس کے شمالی اور مغربی حصے میں بڑے علاقوں پر سنی عسکریت پسند قبضہ کر چکے ہیں جس کی وجہ سے وہاں سیاسی عدم استحکام پایا جاتا ہے۔

اپریل میں منتخب ہونے والی عراقی پارلیمنٹ کا پہلا اجلاس یکم جولائی کو منعقد ہوا مگر عسکریت پسندوں کی جانب سے ملکی سالمیت کو خطرہ ہونے کے باوجود منتخب ایوان تین عہدوں کے لئے ناموں پر اتفاق کرنے میں ناکام رہی ہے۔

عراق میں اقوام متحدہ کے خصوصی نمائندے نکولائی ملادینوف کا کہنا ہے کہ اگر پارلیمنٹ اگلے سیشن تک حکومت کے قیام میں ناکام رہتی ہے تو ملک افراتفری کا شکار ہو جائے گا۔