.

عراق: قیدیوں اور پولیس میں تصادم، ساٹھ ہلاک

مرنے والوں میں 51 قیدی اور نو پولیس اہلکار شامل ہیں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

عراقی دارالحکومت بغداد کے شمالی حصے میں اس وقت ایک خوفناک حملے میں 9 پولیس اہلکار اور 51 قیدی ہلاک ہو گئے ہیں جب جمعرات کی صبح قیدیوں کو دوسری جگہ پر منتقل کیا جا رہا تھا۔

عراق کی وزارت انصاف کے مطابق یہ تمام سزا یافتہ قیدی تھے۔ اور انہیں ایک جیل سے دوسری میں منتقل کیا جا رہا تھا۔

یہ بھی بتایا گیا ہے کہ واقعہ قیدیوں اور پولیس کے درمیان تصادم شروع ہو جانے کے باعث پیش آیا، جس کے نتیجے میں دونوں طرف کا غیر معمولی جانی نقصان ہوا ہے۔

واضح رہے یہ خوفناک خونی تصادم اس واقعے کے ایک روز بعد پیش آیا ہے جس میں دو عراقی جیلوں کو نشانہ بنا کر تقریبا 500 کو رہا کرا لیا گیا۔

خیال رہے کہ داعش کے موصل پر قبضے کے بعد نوری المالکی کی حکومت مسلسل بے بس نظر آ رہی ہے تاہم وزیر اعظم نے ایک روز پہلے قبائل کو مسلح کرنے کا اعلان کیا ہے تاکہ باغیوں کو شکست دی جا سکے۔

ابھی اس واقعے کے حوالے مزید تفصیلات کا انتظار ہے، توقع کے اعلی حکومتی ذمہ دار بھی اس بارے میں بیان جاری کریں گے۔